fbpx

ایرانی بحریہ کا سب سے بڑا جہاز تباہ ، اسرائیل نے بڑا دعویٰ کردیا

ایرانی بحریہ کا سب سے بڑا جہاز تباہ ، اسرائیل نے بڑا دعویٰ کردیا

باغی ٹی وی : آبنائے ہرمز کے قریب آتش زدگی کے بعد ایران کی بحریہ کا ایک سب سے بڑا جہاز ڈوب گیا ہے۔

امدادی جہاز “خارگ” کو بچانے کی ہر کوشش کی گئی لیکن بچایا نہ جا سکا، اس بحری جہاز کا نام اس جزیرے کے نام سے منسوب ہے جو ایران کے لئے تیل کے اہم ٹرمینل کا کام کرتا ہے۔

رپورٹس کے مطابق آگ رات دو بجے کے بعد بندر گاہ جسک کے پاس لگی، جسے فائر فائٹرز نے بجھانے کی پوری کوشش کی، جہاز آبنائے ہرمز کے قریب خلیج عمان پر تہران کے جنوب مشرق سے790 میل موجود تھا۔

ایران کے جہاز کو آگ لگنے کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو چکی ہے جس میں جہاز سے دھوئیں کے بادلوں کو دیکھا جا سکتا ہے۔

ایران کی فوج نے بھی خارگ کو ایک "تربیتی جہاز” کے طور پر شناخت کیا اور تصدیق کی کہ جہاز میں 400 کے قریب عملہ اور ٹرینی موجود تھے سب کو بحفاظت نکال لیا گیا تھا۔

آگ کی وجہ ابھی تک نہیں‌ معلوم ہو ہو سکی گئی لیکن ایک فوجی اہلکار نے ایران کے IRNA کو بتایا کہ آگ انجن کے کمرے میں شروع ہوئی اور جہاز کے جسم کے کچھ حصے پگھل کر سمندر میں گر گئے۔

اس حوالے سے امریکی اخبار نیویارک ٹائمز نے ایک امریکی ذمے دار کے حوالے سے بتایا تھا جس کی شناخت ظاہر نہیں‌کی گئی ، کہ اسرائیل نے واشنگٹن کو بتایاہے کہ اس نے اریٹیریا کے نزدیک اس ایرانی بحری جہاز کو نشانہ بنایا۔ تل ابیب نے واضح کیا کہ یہ حملہ اسرائیلی بحری جہازوں کے خلاف ایران کی کارروائیوں کے جواب میں کیا گیا۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.