ورلڈ ہیڈر ایڈ

اسحاق ڈار کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں کا ریفرنس ،سماعت ملتوی

اسحاق ڈار کے خلاف آمدن سے زائد اثاثوں کے ریفرنس پر سماعت18ستمبر تک ملتوی کر دی گئی

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق احتساب عدالت اسلام آباد کے جج محمد بشیر نے ریفرنس پر سماعت کی ،وکیل حشمت حبیب نے کہا کہ چیف جسٹس آصف سعید کھوسہ نے آپ کے لیے پیغام بھیجا ہے،نیب کے تمام کیسز انجینئرڈہیں، کل کی تقریر میں آپ کے لیے یہ پیغام ہے، پراسیکیوٹر نیب نے کہا کہ اس کا مطلب یہ ہے کہ گواہ جھوٹے نہیں ہونے چاہئیں، وکیل نے کہا کہ چیف جسٹس نے اوپن کورٹ میں سب کہا ہے میں نے خود سنا ہے،

پراسیکیوٹر نیب نے عدالت کو بتایا کہ ریفرنس کے تفتیشی افسر کی شادی ہے، وہ پیش نہیں ہو سکتے، عدالت نے کیس کی سماعت 18 ستمبر تک ملتوی کر دی .

واضح رہے کہ پاکستان کی سب سے بڑی عدالت سپریم کورٹ کے 28 جولائی 2017 کے پاناما کیس کے فیصلے کی روشنی میں نیب نے اسحاق ڈار کے خلاف آمدن سے زائد اثاثے بنانے کا ریفرنس دائر کیا تھا۔ اسحاق ڈار اور ان کے اہل خانہ کے 831 ملین روپے کے اثاثے ہیں جن میں مختصر مدت کے دوران 91 گنا اضافہ ہوا۔ سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے خلاف اسلام آباد کی احتساب عدالت میں آمدن سے زیادہ اثاثوں کے ریفرنس میں مسلسل غیر حاضری کے سبب انھیں اشتہاری قراردے چکی ہے، عدالت نے اسحاق ڈار کی جائیدار قرق کرنے کے بھی احکامات جاری کئے ہوئے ہیں. سابق وزیر خزانہ علاج کی غرض سے لندن گئے لیکن تاحال پاکستان واپس نہ آئے.

اسحاق ڈارکے بارے حکومت نے ایسا کام کیا کہ مسلم لیگ ن مشکل میں

اسحاق ڈار کے خلاف ریفرنس، سماعت ملتوی

اسحاق ڈار کے خلاف منی لانڈرنگ کی بھی تحقیقات کا آغاز

 

 

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.