fbpx

اسلام آباد میں طلبہ سراپا احتجاج حکومت سے کیے گئے مطالبات سامنے آ گئے

وفاقی دارالحکومت اسلام آباد نیشنل پریس کلب کے باہر اسکول کے بچوں کا احتجاج کرونا کی تیسری لہر نے جہاں پاکستان کے تمام نظام کو بری طرح مفلوج کردیا ہے دوسری طرف روز بروز احتجاج کا سلسلہ بڑھتا جا رہا ہے

بچوں کا کہنا ہے ہمارا مستقبل حکومتی ناقص پالیسی کی وجہ سے داؤ پر لگ گیا ہے کرونا کی لہر کی وجہ سے ہم دور دراز گاؤں منتقل ہو گئے حکومت کی آئے دن پالیسیاں تبدیل ہونے پر ہمارا مستقبل داؤ پر لگ گیا ہے پورے ملک میں انٹرنیٹ کی سہولت نہ ہونے کی وجہ سے ہماری پڑھائی سخت متاثر ہوئی

پورے ملک کا تعلیمی نظام یکساں نہ ہونے کی وجہ سے پہلے ہی ہم پریشان حال ہیں اب حکومت کی طرف سے فوری طور پر یہ اعلان کردیا کہ پیپر کینسل کردیئے گئے ہیں کرونا کی وبا کی وجہ سے حکومت مکمل طور پر بوکھلاہٹ کا شکار ہے

عوام کے ساتھ ساتھ کسی بھی ادارے کو حکومت ریلیف دینے میں بری طرح ناکام دکھائی دے رہی ہے بچوں کا کہنا ہے ہمارا حکومت سے مطالبہ ہے ہمارے مستقبل کے بارے میں بہتر فیصلہ کیا جائےکرونا وبا کی وجہ سے ہم پہلے ہی ذہنی طور پر سخت پریشان ہیں حکومتی پالیسیاں ہمیں مزید ذہنی مفلوج کر رہی ہیں ہمارے مطالبات کو مدنظر رکھتے ہوئے ہمارا مستقبل بچایا جائے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.