افسران کی ملی بھگت، اسلام آباد میں‌ مویشی منڈیوں‌ کی نیلامی دوسرے دن بھی ناکام

میٹرو پولیٹن کارپوریشن اسلام آباد کے افسران کی ملی بھگت کے باعث وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں مویشی منڈیوں کی نیلامی دوسرے روز بھی ناکام ہوگئی ہے،

باغی ٹی وی کے ذرائع کے مطابق دوسرے دن پانچ منڈیوں کی بولی 5 کروڑ 60 لاکھ روپے تک سے زیادہ نہ جاسکی، گزشتہ سال یہ بولی 7 کروڑ 10 لاکھ روپے تھی، بولی ناکام کرنے کے بعد اب ڈی ایم اے مویشی منڈیاں اپنے طور پر چلانے کی منصوبہ بندی کر رہا ہے جس میں قومی خزانے کو کروڑوں روپے کے نقصان کا خدشہ ہے، گزشتہ روز ایم سی آئی کے ذیلی ادارے ڈی ایم اے کی انتظامیہ نے وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں عید قربان کے موقع پر عارضی مویشی منڈیوں کے قیام کے لئے نیلام عام دوسرے روز بھی جاری رکھا،

ذرائع کے مطابق دوسرے روز کی بولی کے دوران ڈی ایم اے کو پانچ مختلف مقامات پر مویشی منڈی کے لئے سب سے زیادہ بولی 5 کروڑ 60 لاکھ روپے کی ملی جو کہ گزشتہ سال کے مقابلے میں اڑھائی کروڑ روپے کم تھی جس پر ڈی ایم اے نے بولی مسترد کر دی، ذرائع نے دعویٰ کرتے ہوئے کہا ہے کہ مویشی منڈیوں کے قیام کی بولی ڈی ایم اے کے افسران و اہلکاروں کی ملی بھگت سے ناکام ہوگئی ہے جس سے ادارے کو اس سال کروڑوں روپے کے نقصان کا احتمال ہے، بولی کی ناکامی کے بعد ڈی ایم اے مذکورہ مقامات پر از خود منڈیاں لگانے کا منصوبہ بنا رہا ہے جس سے کروڑوں روپے خرد برد کیئے جائیں گے،

واضح رہے کہ دو یوم قبل بھی مرکزی عارضی مویشی منڈی بھی کم بولی آنے کے باعث ڈی ایم اے نے مسترد کر دی تھی، ڈی ایم اے کی جانب سے اسلام آباد میں پانچ مقامات پر مویشی منڈیاں‌ قائم کرنے کا کہا گیا ہے،
محمد اویس

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.