اسلام آباد جیسے شہرمیں اسرائیلی پرچم لہرایا جانا بہت بڑی سازش کا پیش خیمہ ہے ، حکومت نوٹس لے ، فلسطین فاونڈیشن پاکستان

کراچی:اسلام اباد جیسے شہرمیں اسرائیلی پرچم لہرایا جانا بہت بڑی سازش کا پیش خیمہ ہے ، حکومت نوٹس لے ،اطلاعات کےمطابق پاکستان کی مذہبی اورسیاسی جماعتوں کی طرف سے اسلام آباد جیسے بڑے شہر میں اسرائیلی پرچم لہرائے جانے پربڑی تشویش کا اظہارکیا ہے ،

باغی ٹی وی کے مطابق فلسطین فاؤنڈیشن پاکستان کے مرکزی سرپرست رہنماؤں بشمول سابق رکن قومی اسمبلی محمد حسین محنتی، سابق اراکین سندھ اسمبلی محفوظ یار خان، میجر قمر عباس، جماعت اسلامی کے نائب امیر مسلم پرویز، جمعیت علماء پاکستان کے صدر علامہ قاضی احمد نورانی، مجلس وحدت مسلمین سندھ کے صدر علامہ باقر زیدی، پاکستان تحریک انصاف کے اسرار عباسی، پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سید ارشد نقوی ایڈوکیٹ، پاکستان مسلم لیگ نواز کے پیرزادہ ازہر علی ہمدانی، آل پاکستان سنی تحریک کے صدر مطلوب اعوان قادری، جعفر یہ الائنس کے رہنما سید شبر رضا ، جمعیت اہلحدیث کے رہنما علامہ عبد الخالق فریدی، معروف خطیب علامہ سجاد شبیری اور پائیلر کے چیئر مین کرامت علی سمیت فلسطین فاؤنڈیشن پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل صابر ابو مریم نے اسلام آباد میں غاصب صہیونی ریاست اسرائیل کا جھنڈا لگانے اور اسرائیل کی حمایت میں پراپیگنڈا کو پاکستان کی سالمیت کے لئے سنگین چیلنج قرار دیتے ہوئے اس واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کی ہے۔

واضح رہے کہ گذشتہ روز سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والے ویڈیو میں اسلام آباد میں ایک پاکستانی صہیونی کو دکھایا گیا ہے جس نے اسلام آباد میں اسرائیلی جھنڈا لگا رکھا تھا اور اسرائیل کی حمایت میں پروپیگنڈہ کرنے میں مصروف تھا ۔

فلسطین فاؤنڈیشن پاکستان کے رہنماؤں نے صدر پاکستان عارف علوی، وزیر اعظم عمران خان اور آرمی چیف جنرل قمر باجوہ سمیت اراکین پارلیمنٹ سے اس معاملہ پر سنجیدگی سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے اور کہا ہے کہ یہ ایک حساس معاملہ ہے اس طرح کی سرگرمیاں پاکستان کی سالمیت اور آئین پاکستان کی خلاف ورزی ہے ۔

رہنماؤں نے کہا کہ پاکستان واحد اسلامی ملک ہے جو نظریاتی بنیادوں پر حاصل کیا گیا ہے اور ایٹمی طاقت رکھتا ہے جبکہ اسرائیل پاکستان کی سالمیت کے خلاف مسلسل ہندوستان کی مدد کررہا ہے اور اب پاکستان کی حدود میں اس طرح کی مشکوک سرگرمیاں خطرے کی گھنٹی ہے ۔

انہوں نے کہا کہ حساس ادارے قانون نافذ کرنے والے ادارے اس واقعہ کے خلاف فوری نوٹس لیں اور کارروائی کریں ورنہ بعد ازاں اسرائیل نواز دنیا بھر کے ادارے ان کی حمائت میں فعال ہوکر پاکستان پر دباو ڈالیں گے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے عوام میں اس واقعہ کے بعد شدید تشویش پائی جاتی ہے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.