fbpx

جامن توڑنے پر 4 سالہ بچی کو قتل کرنیوالے 2 ملزمان گرفتار

پنجاب کے صوبائی دارالحکومت لاہور کے علاقے فیروز والا میں قتل کی لرزہ خیز واردات، پولیس نے جامن توڑنے پر معصوم بچی کو قتل کرنے والے دو ملزمان گرفتار کر لئے-

باغی ٹی وی : لاہور پولیس کے مطابق ملزمان نے جامن توڑنے پر 4 سال کی بچی کو قتل کر کے لاش کھیتوں میں پھینک دی تھی، بچی کے والد یوسف نے اغواء کا مقدمہ درج کرایا تھا۔

جائیداد کا تنازعہ: بیٹے نے باپ کو بھرے بازار میں خنجر سے ذبح کر دیا

پولیس کا بتانا ہے کہ ملزمان نے 18جون کو بچی کو قتل کیا تھا، بچی کی لاش کی باقیات گزشتہ روز ملی تھیں۔

قبل وزیر آباد میں ایک واقعے میں جائیداد کی خاطر بیٹے نے باپ کو دن دیہاڑے بھرے بازار میں خنجر سے ذبح کر دیا تھا جی ٹی روڈ نزد گرلز کالج کا رہائشی اسکوارڈن لیڈر (ر) وارث اقبال بیگ پرانی غلہ منڈی میں دوست کی دکان پر آرہا تھا کہ اس کے 20 سالہ بیٹے مصطفی وارث نے خنجر سے اچانک حملہ کر کے اس کی شہ رگ کاٹ دی۔

گھر سے ناراض ہو کر جانیوالی طالبہ داتا دربار سے اغوا،پولیس نے کروایا بازیاب

ملزم موقع سے فرارہو گیا تھا جسے پولیس نے پیچھا کر کے اسلام آباد موڑ سیالکوٹ روڈ سے گرفتار کیا تھا ملزم نے چند سال قبل بھی بڑی عید پر باپ پر قاتلانہ حملہ کیا تھا جس میں شدید زخمی ہوگیا تھا،مقتول کا اپنی سابقہ اہلیہ نورین کے ساتھ کروڑوں کی اراضی کی ملکیت کا تنازع چلا آ رہا تھا، مقدمہ مقامی عدالت میں آخری مراحل میں تھا۔

رضامندی سے قائم جنسی تعلقات کو بعد میں”زیادتی” نہیں کہا جا سکتا، بھارتی عدالت کا فیصلہ