اسد الدین اویسی نے لوک سبھا میں جے فلسطین اور اللہ اکبر کے نعرے لگادئیے

حکمران اتحاد کی جانب سے حلف کے بعد نعرے لگانے پر اسد الدین اویسی پر سخت تنقید کی جارہی ہے
0
78

نئی دہلی: بھارتی سیاست دان اسد الدین اویسی نے لوک سبھا کی رکنیت کا حلف اٹھاتے ہوئے جے فلسطین اور اللہ اکبر کے نعرے لگادئیے۔

بھارت لوک سبھا کےہونے والے اجلاس میں نو منتخب اراکین کی حلف برداری جاری تھی کہ اسی دوران حلف برداری کے لیے ریاست تلنگانہ سے منتخب رکن اسد الدین اویسی کا نام پکارا گیااسد الدین اویسی جب ڈائس کی جانب بڑھنے لگے تو ایوان میں جے شری رام کے نعرے سنائی دئیے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق اسد الدین اویسی نے اردو میں حلف پڑھا اور آخر میں ’جے بھیم، جے میم، جے تلنگانہ، جے فلسطین، تکبیر اللہ اکبر‘ کہا،’جے بھیم، جے میم‘ کا نعرہ ان سیاسی جماعتوں کی جانب سے لگایا جاتا ہے جو سمجھتی ہیں کہ بھارت میں دلتوں اور مسلمانوں کو دیوار سے لگایا جارہا ہے۔

عادل راجہ، صابر شاکر سمیت 6 یوٹیوبرز اور صحافیوں کی جائیدادیں ضبط اور شناختی کارڈ …

حکمران اتحاد کی جانب سے حلف کے بعد نعرے لگانے پر اسد الدین اویسی پر سخت تنقید کی جارہی ہے اور کئی اراکین نے اس اقدام کو خلاف آئین بھی قرار دیا ہےپارلیمنٹ کے باہر صحافیوں سے بات کرتے ہوئے اسد الدین اویسی نے کہا کہ ان کے اقدام کو خلاف آئین قرار دینے والے اس حوالے آئین کی شق بتائیں بعدازاں لوک سبھا کے اسپیکر نے اسد الدین اویسی کی جانب سے لگائے جانے والے نعروں کو ایوان کی کارروائی سے حذف کروادیا۔

خیال رہے کہ اسدالدین اویسی نے حالیہ لوک سبھا انتخابات میں بی جے پی امیدوار مادھوی لاٹھا کو سوا تین لاکھ سے زائد وٹوں سے شکست دی تھی۔

چین: خلا میں بھیجے گئے راکٹ کا مبینہ ملبہ دیہات میں گر گیا

Leave a reply