خواتین کیساتھ جنسی استحصال کے الزامات،جنتا دل سیکولر کا رکن پارلیمنٹ جرمنی فرار

کانگریس جنرل سیکریٹری پرینکا گاندھی نے وزیراعظم نریندر مودی کو تنقید کا نشانہ بنایا
0
103
bjp

بنگلورو: سابق بھارتی وزیر اعظم ایچ ڈی دیوے گوڑا کے پوتے اورجنتا دل سیکولر کا رکن پارلیمنٹ پرجول ریونا متعدد خواتین کی جانب سے جنسی استحصال کے الزامات کے بعد بنگلورو سے جرمنی فرار ہو گیا ہے ۔

باغی ٹی وی : بھارتی میڈیا کے مطابق ایچ ڈی دیوے گوڑا کے پو تے کی ویڈیو کرناٹک میں 26 اپریل کوقومی انتخابات کے دوسرے مرحلے کی پولنگ سے ٹھیک دو دن پہلے سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی جس کے بعد کرناٹک کی سیاست ، جنتا دل سیکولر اور بی جے پی کی پریشانیوں میں مزید اضافہ ہو گیا ہے۔

مبینہ اسکینڈل گزشتہ ہفتے کے روز ایک خاتون کی جانب سے ریونا پر جنسی استحصال کا الزام لگانے اور ان کے خلاف پولیس میں مقدمہ درج کروانے کے بعد سامنے آیا متاثرہ خاتون نے الزام عائد کیا کہ 2019 سے 2022 کے دوران اسے کئی بار پرجول ریونانے جنسی استحصال کانشانہ بنایا ، یہی نہیں بلکہ ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہونے کے بعد کئی اور خواتین کی جانب سے بھی پرجول ریونا پر اسی طرح کے الزامات لگائے جا رہےہیں ۔

بھارتی میڈیا کے مطابق معاملے پرکرناٹک کے وزیر اعلی سدارامیا نے اسپیشل کمیٹی تشکیل دے دی، ویڈیو اسکینڈل معاملے پر کمیٹی نے جانچ کے سلسلے میں کئی افراد کو نوٹس جاری کردئیے ہیں۔

ہم ملک کی خاطر پی ٹی آئی کے ساتھ بات چیت کے لیے تیار ہیں،رانا …

مبینہ اسکینڈل پر جہاں بی جے پی کے رہنما کھل کر بات کرنے سے کترا رہے ہیں وہیں جنتا دل سیکولر کے رکن اسمبلی نے پارٹی کے صدر دیوے گوڑا کو دو صفحات پر مشتمل ایک خط لکھاہے اور پرجول ریونا کو پارٹی سے برطرف کرنے کا مطالبہ کیا ہے، انہوں نے کہا ہے کہ اس معاملے پر پارٹی کوشرمندگی کا سامنا کرنا پڑر ہا ہے، وائرل ویڈیو پارٹی کے وقار کو نقصان پہنچارہی ہے ، جبکہ کرناٹک ریاست کی خواتین کمیشن کی صدر ڈاکٹر ناگ لکشمی چودھری بھی اس سلسلے میں حکومت کو خط لکھ چکی ہیں۔

معاملے پر کانگریس جنرل سیکریٹری پرینکا گاندھی نے وزیراعظم نریندر مودی کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے اور سوال کیا کہ مودی جی کیا اب بھی آپ خاموش رہیں گے؟ پرینکا نے ایکس پر لکھا ہے کہ جس لیڈر کے کندھے پر ہاتھ رکھ کر وزیر اعظم تصویر کھنچواتے ہیں، جس لیڈر کے حق میں انتخابی تشہیر کرنے 10 دن قبل وزیر اعظم خود آتے ہیں، آج کرناٹک کا وہ لیڈر فرار ہےپرجول کے جرم کے بارے میں سن کر ہی دل دہل جاتا ہے سینکڑوں خواتین کی زندگی جس نے تہس نہس کر ڈالی مودی جی کیا اب بھی آپ خاموش رہیں گے؟

آئی ایم ایف نے پاکستان کے لیے آخری قسط کی منظوری دے دی

دوسری جانب جے ڈی ایس پر حملہ کرتے ہوئے کرناٹک کے نائب وزیر اعلیٰ ڈی کے شیو کمار نے کہا کہ مجھے میڈیا سے پتہ چلا ہے کہ پرجول ریونا بھارت سے فرار ہوگئے ہیں جو کہ ایک ناقابل معافی جرم ہے۔

جبکہ ریاستی بی جے پی کے ترجمان کا کہنا تھا کہ ایک پارٹی کے طورپر ہمارا اس ویڈیو سے کوئی لینا دینا نہیں ہےجبکہ خود ریونا نے دعویٰ کیا ہے کہ ویڈیو ان کے امیج کو خراب کرنے اور ووٹروں کے دماغ میں زہر بھرنے کے لیے وائرل کی گئی ہے ۔

واضح رہے کہ بھارت کے گیارہویں وزیر اعظم ایچ ڈی دیوے گوڑا یکم جون 1996 سے 21 اپریل 1997کے درمیان وزارت عظمیٰ کے عہدے پر فائز رہے ہیں رجول ریونا بھارت کے حکمران قومی جمہوری اتحادکی حلیف جماعت جنتا دل سیکولر کے رکن پارلیمنٹ اور جنوبی ریاست کرناٹک کے ہاسن پارلیمانی حلقے سے این ڈی اے کے امیدوار ہیں 33سالہ پرجول ریونا کے والد ایچ ڈی ریونا ریاست کرناٹک کے وزیر رہ چکے ہیں۔

29 اپریل کو وفات پانے والی چند مشہور شخصیات

Leave a reply