جنوری میں کرنٹ اکائونٹ خسارے کا ریکارڈ جاری

جنوری میں کرنٹ اکائونٹ خسارے کا ریکارڈ جاری

باغی ٹی وی : سٹیٹ بینک آف پاکستان نے دسمبر 2020 کے 652 ملین ڈالر کے مقابلے میں جنوری 2021 میں پاکستان کا کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ 229 ملین ڈالر ریکارڈ کرنے کا انکشاف کیا ہے۔
مرکزی بینک نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹویٹر پر کہا ہے کہ مالی سال 2021 کے جولائی تا جنوری کے دوران کرنٹ اکاؤنٹ گزشتہ برس کی اسی مدت کے 2544 ملین ڈالر خسارے کے مقابلے میں 912 ملین ڈالر سرپلس ہے۔

سٹیٹ بینک نے کہا کہ جنوری 2020 میں ملک کو 512 ملین ڈالر خسارے کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

مرکزی بینک نے اپنے ٹویٹ میں کہا کہ “جنوری 2020 کے مقابلے میں برآمدات میں بتدریج اضافہ ہوا جبکہ ترسیلاتِ زر مسلسل اپنی ریکارڈ سطح پر پہنچیں۔ گھریلو بحران کو حل کرنے کے لیے گندم اور چینی کی کے ساتھ پام آئل کی درآمدات میں نمایاں اضافہ رہا۔ مشینری کی درآمدات میں بھی مسلسل اضافہ دیکھا گیا جو معاشی بحالی کی عکاسی کرتی ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.