fbpx

30ہزارڈالر کے عوض ڈارک نیٹ پرFGM-148 Javelin امریکی میزائل کی فروخت جاری

ماسکو: 30ہزارڈالر کے عوض ڈارک نیٹ پرFGM-148 Javelin امریکی میزائل کی فروخت جاری،اطلاعات کے مطابق ایک روسی نیوز ایجنسی نے دعویٰ کیا ہے کہ یوکرین کو ملنے والے خطرناک امریکی میزائل اب صرف 30 ہزارامریکی ڈالرز کے عوض آن لائن فروخت ہورہے ہیں‌ ، اس حوالے سے روسی نیوز ایجنسی نے ثبوت بھی پیش کردیئے ہیں ،

 

روس نواز خبر رساں ایجنسی اے بی ایس نیوز کی تحقیقات کے مطابق، ایک FGM-148 Javelin ڈارک نیٹ پر 30,000 ڈالر میں فروخت ہورہا ہے اور یہ خطرناک میزائل کوئی بھی خرید سکتا ہے ،۔ ٹیلی گرام اے بی ایس نیوز پر اپنے چینل میں اس جگہ سے لیے گئے اسکرین شاٹس شیئر کرتے ہیں جہاں امریکی ہتھیار فروخت ہوتے ہیں۔

 

 

روسی نیوز ایجنسی نے ثبوت دیتے ہوئے کچھ اسکرین شاٹس بھی شیئر کیے ہیں جن کے مطابق پروڈکٹ کے دو اسکرین شاٹس بیچنے والے کی مقرر کردہ قیمت "$30,000 سے” دکھاتے ہیں، جس کا مطلب ہے کہ یہ نیلامی ہوگی اور ابتدائی قیمت $30,000 ہے۔

نیوزایجنسی کا دعویٰ ہے کہ FGM-148 Javelin، جو ڈارک نیٹ ورک میں فروخت ہورہا ہے،یہ حقیقت میں‌ روس کےساتھ جنگ ​​کی وجہ سے امریکہ کی طرف سے یوکرین کو فراہم کیے گئے ٹینک شکن گائیڈڈ میزائل سسٹمز میں سے ایک ہے۔اس نیوز ایجنسی نے یہ بھی دعویٰ‌ کیا ہے کہ یہ خطرناک میزائل یوکرین کے دارالحکومت میں فروخت کیے جارہے ہیں‌۔

روسی نیوز ایجنسی نے دعویٰ کیا ہے کہ یوکرینی فوجی افسران ڈارک نیٹ پر جیولین میزائل آن لائن بیچ ے۔ ٹی او آر براؤزر والا کوئی بھی شخص اس اے ٹی جی ایم کو آن لائن سٹور میں خرید سکتا ہے،”

 

 

اس قسم کی مصدقہ اطلاعات کے بعد یہ خیال کیا جارہاہے کہ دہشت گرد اس میزائل کوحاصل کرکے دنیا میں بدامنی پھیلا سکتے ہیں اور کئی ممالک کی سلامتی کوخطرے میں ڈال سکتے ہیں، اس لیے اقوام متحدہ کو اس کا نوٹس لینا چاہیے

 

 

دوسری طرف انٹرپول نے اس چیز کا نوٹس لیتےہوئے کہا ہےکہ جتنی جلدی ممکن ہوسکے اس واقعہ کی تحقیقات کرکے اس میں ملوث افراد کو کٹہرے میں لایا جائے اور اس بات کو یقینی بنایا جائے کہ یہ میزائل کسی دہشت گرد کے ہاتھ نہ لگے

 

FGM-148 Javelin، یا Advanced Anti-Tank Weapon System-Medium (AAWS-M)، ایک امریکی ساختہ پورٹیبل اینٹی ٹینک میزائل سسٹم ہے جو 1996 سے امریکی افواج کے استعمال میں ہے، اور مسلسل اپ گریڈ کیا جاتا ہے۔ اس جدید میزائل سسٹم نے امریکی سروس میں M47 ڈریگن اینٹی ٹینک میزائل کی جگہ لے لی۔ اس کا فائر اینڈ فرجٹ ڈیزائن خودکار انفراریڈ گائیڈنس کا استعمال کرتا ہے جوچلانے والے کو لانچ کے فوراً بعد کور حاصل کرنے کی سہولت دیتا ہے، اس کے برعکس وائر گائیڈڈ سسٹم، جیسا کہ ڈریگن استعمال کرتا ہے، جس کے لیے چلانے والے کو پوری مصروفیت میں ہتھیار کی رہنمائی کرنے کی ضرورت ہوتی ہے۔ جیولن کا ہائی ایکسپلوسیو اینٹی ٹینک (HEAT) وار ہیڈ جدید ٹینکوں کو اوپر سے حملہ کرکے شکست دے سکتا ہے،

سوئی سدرن کےلیےگیس کی قیمت میں44 فیصد اضافے کی منظوری

بھارت میں کورونا نے پھرسراُٹھا لیا

ہمارے ملک میں مداخلت کیوں:کویت نے امریکی سفیرکوطلب کرکےسخت پیغام بھیج دیا

اگست سے پٹرول کی قیمتیں کم ہونےکا امکان:اوپیک نے روس سے مدد مانگ لی