fbpx

جوہرٹاؤن دھماکہ ، گرفتار ملزمہ عدالت پہنچ گئی

جوہرٹاؤن دھماکہ ، گرفتار ملزمہ عدالت پہنچ گئی

جوہر ٹاؤن بم دھماکے کے مقدمے میں گرفتار ملزمہ کی ضمانت پر لاہور ہائیکورٹ میں سماعت ہوئی

لاہور ہائیکورٹ نے پولیس سے آئندہ سماعت پر مقدمے کا ریکارڈ طلب کر لیا ،ملزمہ عائشہ بی بی نے ایڈوکیٹ فدا حسین رانا کی وساطت سے درخواست دائر کر رکھی ہے درخواست میں سی ٹی ڈی اور دیگر کو فریق بنایا گیا ہے ،درخواست میں موقف اپنایا گیا کہ واقعے سے کوئی تعلق نہیں ہے ،پولیس نے بلا وجہ گرفتار کر رکھا ہے ۔ کسی دہشتگرد گروہ کے ساتھ کوئی تعلق نہیں ہے،بے بنیاد گرفتار کیا گیا ہے ۔سہولت کاری کے الزام میں گرفتار کیا گیا ہے ، ملزمہ موقع پر موجود نہیں تھی ۔ملزمہ سے تفتیش مکمل ہو چکی ہے کسی قسم کی کوئی ریکوری نہیں ہونی ۔ ملزمہ راہ فرار اختیار نہیں کرے گی ضمانت بعد از گرفتاری منظور کی جائے ۔

واضح رہے کہ لاہور کے علاقے جوہر ٹاؤن میں 23 جون کو دھماکہ ہوا تھا اسی علاقے میں جماعت الدعوۃ کے امیر حافظ محمد سعید کی رہائش گاہ بھی قائم ہے ،قبل ازیں دھماکے کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔مقدمہ محکمہ انسداد دہشت گردی لاہور تھانے میں انسپکٹر عابد بیگ کی مدعیت میں درج کیا گیا۔ مقدمے میں قتل، اقدام قتل اور دہشت گردی کی دفعات شامل کی گئی ہیں۔ مقدمے میں 7 اے ٹی اے، 3/4ایکسپلوزو ایکٹ سميت دیگر دفعات شامل ہیں۔درج ایف آئی آر کے مطابق دہشت گردوں نے کارروائی میں گاڑی اور موٹر سائیکل استعمال کیں۔ مقدمے کے متن میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ دھماکے میں 3افراد جاں بحق اور 21 زخمی ہوئے۔ مقدمے میں 3 نامعلوم دہشت گردوں کا ذکرکیا گیا ہے۔

جوہر ٹاون دھماکے میں ملوث ملزمان کی گرفتاری کے بعد آئی جی پنجاب انعام غنی نے انکشاف کیا تھا کہ 10 کے قریب پاکستانی جوہر ٹاوَن دھماکے میں ملوث ہیں، وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے آئی جی پنجاب انعام غنی کا کہنا تھا کہ جوہر ٹاؤن دھماکے کی تحقیقات کے لیے جے آئی ٹی تشکیل دی گئی جوہر ٹاؤن دھماکے میں استعمال ہونے والی گاڑی 2010میں چھینی گئی ،دہشت گردوں کا ہدف پولیس چوکی تھی پولیس اہلکار نے شک کی بنیاد پر گاڑی کو روکا تھا، ملزمان کا سابقہ کرمینل ریکارڈ بھی چیک کیا جارہا ہے،گرفتار ملزم کے پاس گاڑی کی سپرداری کی دستاویزات تھیں پورے نیٹ ورک کی تفصیلات چند گھنٹوں میں حاصل کرلی گئیں،

آئی جی پنجاب انعام غنی کا مزید کہنا تھا کہ واقعے کے ماسٹر مائینڈا فراد کی بھی شناخت ہوچکی ہے، ملک دشمن عناصرلوگوں کو دہشت گردی کے لیے استعمال کرتے ہیں،گاڑی کی خریداری،سہولت کاری میں ملوث ملزمان گرفتار کر لیے،ملزم کا آبائی تعلق کے پی ،پنجاب کا رہائشی ہے،گاڑی کی مرمت کرنے والے افرادکو بھی گرفتارکرلیا گیا ہے،10 کے قریب پاکستانی بھی ہمارے پاس ہیں جنہوں نے دہشت گردی میں معاونت کی جن میں مرد اور خواتین شامل ہیں۔

جوہر ٹاون دھماکہ کیسے ہوا ؟ ابتدائی تحقیقاتی رپورٹ آ گئی

جوہر ٹاون دھماکہ حافظ محمد سعید کی رہائشگاہ کے قریب ہوا؟ حقیقت سامنے آ گئی،

جوہر ٹاون دھماکہ۔ زخمیوں کے نام سامنے آ گئے ۔اموات میں اضافہ

لاہور جوہر ٹاؤن دھماکے میں پڑوسی ملک کے ملوث ہونے کے ثبوت سینئر صحافی سامنے لے آئے

لاہور میں دھماکہ آنکھیں کھولنے کے لیے کافی ہے ، شہباز شریف

دہشت گردی کے کتنے تھریٹ ملے تھے؟ لاہور دھماکے کے بعد آئی جی کا انکشاف

جوہرٹاون دھماکہ:تحقیقاتی ادارے ملزم کے قریب پہنچ گئے،

جوہرٹاؤن دھماکہ؛ بارود سے بھری گاڑی کا مالک کون؟بارود کہاں نصب کیا گیا اورگاڑی کیسے پہنچی؟تہلکہ خیزانکشافات 

لاہور دھماکہ، ایئر پورٹ سے فرار ہونیوالے مشتبہ شخص کو گرفتار کر لیا گیا

جوہر ٹاؤن دھماکہ،تحقیقات میں زبردست کامیابی حاصل کر لی، شیخ رشید

جوہر ٹاؤن دھماکہ "را” کے ملوث ہونے کے ثبوت،دو مزید ملزمان گرفتار،ڈیوڈ بارے اہم انکشافات

جوہر ٹاؤن دھماکہ، سب ملزمان گرفتار، ملک دشمن خفیہ ایجنسی ملوث، بزدار کی پریس کانفرنس

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!