3 بار والا وزیراعظم اپنا اور خاندان کا احتساب کروا سکتا ہے تو یہ جج کیوں نہیں،مریم اورنگزیب

ان کے استعفے ثابت کررہے ہیں کہ نواز شریف سرخرو ہو رہا ہے
0
186

اسلام آباد: پاکستان مسلم لیگ (ن) کی رہنما مریم اورنگزیب کا کہنا ہے کہ 3 بار والا وزیراعظم اپنا اور خاندان کا احتساب کروا سکتا ہے تو یہ جج کیوں نہیں، اعجاز الحسن اور مظاہر علی نقوی نے سہولت کاری کرکے ملک کو برباد کیا-

باغی ٹی وی : لاہور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سابق وفاقی وزیر مریم اورنگزیب نے کہا کہ مریم اورنگزیب نے کہا کہ مسلم لیگ ن پارلیمانی بورڈ کے انٹرویوز کے بعد ٹکٹوں کا فیصلہ کیا ہے، لاہور کی ٹکٹیں بھی جلد جاری ہو جائیں گے، ہر پارٹی انٹرا پارٹی انتخابات الیکشن کمیشن کے قواعد و ضوابط کے مطابق کررہی ہے ، جو شخص آر ٹی ایس بیٹھنے کا عادی ہوجائے، 9 مئی کے حملے کرے، یہ زیادتی نہیں ہے بلکہ الیکشن کمیشن کے قواعد و ضوابط کے مطابق فیصلہ تھا، آپ نے دھاندلی کرکے انٹرا پارٹی الیکشن کروائے تھے، کیا ہر غنڈے کو یہ حق ہونا چاہیئے کہ عدالت پر چڑھ دوڑے۔

سابق وزیر اطلاعات نے کہا کہ آج نوازشریف کے خلاف سازش کرنے والا بینچ اپنے انجام کو پہنچ رہا ہے اس عوام کے خلاف سازش کے سب کردار بےنقاب ہورہے ہیں پوچھتے ہیں مہنگائی کیوں ہوئی؟ یہ اعجاز الاحسن اور مظاہر علی نقوی اس مہنگائی کے ذمہ دار ہیں۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے بھی استعفیٰ دے دیا

ان کا مزید کہنا تھا کہ ججز استعفی دے کر یہ سمجھتے ہیں کہ ملک کے ساتھ جو ظلم کیا وہ بند ہو جائے گا، ان ججز کا احتساب ہونا چاہیئے، جج ہو یا کوئی اور ادارے کا نمائندہ ان کا احتساب ہونا چاہیئے، مظاہر علی نقوی صاحب آپ کھڑے ہوجائیں اور کہیں کہ میرا احتساب کریں،آپ متنازع فیصلے دیں , آپکی کرپشن کے کیسز نکل آئیں , ریفرنسز بن جائیں , آپ پر مقدمات کی تحقیقات ہورہی ہوں , آپ استعفیٰ دے دیں گے اب استعفیٰ دینے سے بات نہیں بنے گی اب احتساب ہوگا-

انہوں نے کہا کہ عدالتوں کے فیصلے تاریخ کا حصہ بنتے ہیں، ابھی اعجازالاحسن صاحب اور مظاہر علی نقوی صاحب نے استعفیٰ دیا ہے۔ کیوں دیا ہے استعفیٰ؟ استعفیٰ دیکر آپ سمجھتے ہیں کہ اپنے دامن پہ لگے کالے دھبے صاف کرسکتے ہیں جب 3 بار والا وزیراعظم اپنا اور خاندان کا احتساب کروا سکتے ہیں تو یہ جج کیوں نہیں، اعجاز الحسن اور مظاہر علی نقوی ملک کی اس بربادی کے ذمہ دار ہیں، ان جیسے لوگوں نے سہولت کاری کرکے ملک کو برباد کیا۔

ڈریپ کی جانب سے کھانسی کے شربت میں زہریلے مادے کا ا لرٹ جاری

مریم اورنگزیب نے کہا کہ یہ اختیار اور طاقتیں اللہ کی امانت ہوتی ہیں، ان کے استعفے ثابت کررہے ہیں کہ نواز شریف سرخرو ہو رہا ہے، یہ لوگ نواز شریف سے احتساب مانگتے تھے آج اب اپنا بھی حساب دیں، چوتھی بار نواز شریف عوام کے ووٹوں سے وزیراعظم بنے جارہا ہے۔

سابق وزیر اطلاعات کا مزید کہنا تھا کہ آپ سب لوگ استعفے دے کر بدنام ہورہے ہیں، آپ لوگوں نے متنازع فیصلے دیے تھے، اعجاز الحسن نے مانیٹرنگ جج بن کر ہیرے تلاش کیے تھے وہ کہاں ہے؟ مظاہر علی نقوی کے خلاف جو ریفرنس دائر ہے وہ ابھی واپس نہیں ہوا۔

ڈونلڈ ٹرمپ کے سول فراڈ کیس کی سماعت کرنے والے جج کو بم حملے کی …

انہوں نے یہ بھی کہا کہ الیکشن کمیشن کے مطابق تمام جماعتوں نے انٹرا پارٹی الیکشن کروانا لازم ہے، آپ کے فیصلے تاریخ کا حصہ تو بن سکتی ہے مگر سچ نہیں ہوسکتے ہیں، ہمیں بلے کے نشان سے مسئلہ نہیں ہے، جماعتوں کے انٹرا پارٹی الیکشن ہونے چاہیئے، ان تمام مسئلوں کی وجہ عمران خان ہے۔

Leave a reply