جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کیس بنچ کی تشکیل کا محفوظ فیصلہ عدالت نے سنا دیا

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کیس بنچ کی تشکیل کا محفوظ فیصلہ عدالت نے سنا دیا

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سپریم کورٹ نے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ کیس بنچ کی تشکیل کا محفوظ فیصلہ سنا دیا،

کیس کی سماعت کیلئے بنچ کی تشکیل کا معاملہ چیف جسٹس پاکستان کے سپرد کردیا گیا۔ سپریم کورٹ نے 10 دسمبر کو محفوظ کیا گیا فیصلہ سنا یا،بنچ کے سربراہ جسٹس عمر عطابندیال نے محفوظ شدہ مختصر فیصلہ سنایا،

سپریم کورٹ نے کہا کہ بنچ تشکیل دینے کا اختیار چیف جسٹس آف پاکستان کے پاس ہے ،چیف جسٹس چاہیں تو درخواستوں پر لارجر بنچ بنا سکتے ہیں ۔ فیصلہ لکھنے والے جج سروس میں ہوں توبنچ میں شامل ہونا ضروری ہے،عام طور پرکیس کا فیصلہ دینے والا بنچ ہی نظرثانی درخواستیں سنتا ہے،

فیصلے میں مزید کہا گیا کہ نظرثانی بنچ میں فیصلہ تحریر کرنے و الا جج لازمی شامل ہوتا ہے ، فیصلہ تحریر کرنے والا جج دستیاب نہ ہو تو حکمنامے سے متفق جج شامل ہوتا ہے،سپریم کورٹ نے تمام درخواستیں نمٹا دیں اورلارجر بنچ کی تشکیل کیلئے معاملہ چیف جسٹس سپریم کورٹ کو بھجوادیا۔

جسٹس عمر عطا بندیال کی سربراہی میں 6رکنی لارجر بینچ نے 10 دسمبر کو فیصلہ محفوظ کیا تھا ،جسٹس قاضی فائزعیسیٰ اور انکی اہلیہ کی جانب سے محمد قاسم ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے سپریم کورٹ نے جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نظر ثانی کیس میں بینچ کی تشکیل کا فیصلہ سنا دیا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.