fbpx

امریکا جاتے جاتے کابل ایئرپورٹ تباہ کرگیا:350 ملین ڈالر کا نقصان

کابل: امریکا جاتے جاتے کابل ایئرپورٹ تباہ کرگیا:350 ملین ڈالر کا نقصان ،اطلاعات کے مطابق افغانستان کے صوبہ لوگر کے ترجمان عاکف مہاجر نے کہا ہے کہ امریکی افواج نے انخلا کے عمل کے دوران کرزئی بین الاقوامی ہوائی اڈے کو 350 ملین ڈالر کا نقصان پہنچایا۔

صوبہ لوگر کے ترجمان عاکف مہاجر نے کرزئی ائیرپورٹ پر الفتخ بریگیڈز کو حفاظتی اقدامات سونپنے کی تقریب کے دوران مقامی اورعالمی میڈیاسے غیر رسمی گفتگومیں کہا کہ امریکی افواج نے انخلا کے عمل کے دوران کرزئی بین الاقوامی ہوائی اڈے کو 350 ملین ڈالر کا نقصان پہنچایا اور دعویٰ کیاکہ ہوائی اڈے کو پرواز کے قابل پوزیشن بنانے کے لیے بین الاقوامی برادریوں کو ہماری مدد کرنی چاہیے۔

عاکف نے انکشاف کیا کہ امریکی افواج نے جان بوجھ کر ہوائی اڈے کے سازوسامان، ان کی بچی ہوئی اشیاء، حساس اشیاء کو نقصان پہنچایا جبکہ ایسی چیزوں پر بھی بمباری کی ہے جو ان کیلیے ممکن نہیں ہے۔

انہوں نے ان جگہوں کی طرف بھی اشارہ کیا جہاں سب سے زیادہ نقصان سالٹ ہٹ کے علاقے میں ہوا جہاں سی آئی اے کے پاس انتہائی حساس اشیاء تھیں انہوں نے اتنا نقصان پہنچایا کہ طالبان کے پاس نہیں ہے۔

70خصوصی گروپ کا ایک دستہ جو حال ہی میں طالبان سپیشل فورسز ٹریننگ سینٹر سے پاس آؤٹ ہوا نے صلاحیتوں کا مظاہرہ کیا نے پریڈ کے دوران اس عزم کا اظہار کیاکہ وہ جان پرکھیل کرہوائی اڈے کی حفاظت کریں گے ۔یہ وہ فاتح بریگیڈز جو پہلے خودکش رہی کو ہوائی اڈے کی رہنمائی سے نوازا گیا۔

صوبہ لوگر کے ترجمان عاکف مہاجر نے کرزئی ائیرپورٹ پر الفتخ بریگیڈز کو حفاظتی اقدامات سونپنے کی تقریب کے دوران مقامی اورعالمی میڈیاسے غیر رسمی گفتگومیں کہا کہ فاتح بریگیڈ کے کمانڈر قاری فواد فاتح نے کہاکہ نئے گروپ نے 70 افراد پر سمجھوتہ کیا جنہوں نے چار ماہ تک تربیت لی اور وہ کمانڈوز کی تربیت کے ساتھ ساتھ دوسروں کو بھی تربیت دیتے ہیں۔

واضح رہے کہ کابل ایئرپورٹ کے علاوہ جلال آباد اور دیگر ہوائی اڈے اور رن وے اب فاتح بریگیڈ اور بدری بریگیڈ کی نگرانی میں ہیں۔ کابل کے بین الاقوامی ہوائی اڈے پر طالبان کے 12ہزار سے زائدسپیشل گروپوں کی حفاظت ہے جن میں تین اندرونی اور دو باہر کی سیکورٹی ہے۔

ہیلی کاپٹروں، چھوٹے منصوبوں اور دیگر فوجی سازوسامان کو نقصان پہنچایا گیا اور کتوں کو آزاد کر دیا گیا جہاں ہوائی اڈے کے ارد گرد بھی دیکھا گیا۔اعلی سفارتکاروں ،دونوں ملکوں کی فوجی اورطالبان قیادت سے ملاقات کے دوران قطراورامارات کی دوپروازوں نے جمعہ کی شام کرزئی ہوائی اڈے پر لینڈکیا۔