کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے بعد پرویز رشید نے کیا بڑا اعلان

کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے بعد پرویز رشید نے کیا بڑا اعلان

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما پرویز رشید نے کہا کہ جس کی تقریر عمران خان سے برداشت نہیں ہوتی وہ آواز خاموش کرنا چاہتے ہیں،

الیکشن کمیشن سے سینیٹ کے کاغذات نامزدگی مسترد ہونے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پرویز رشید کا کہنا تھا کہ میرے جیسے امیدوار انھیں کانٹے کی طرح کھٹکتے ہیں۔ میری نامزدگی مسترد کرنے کا طریقہ انجینئرڈ ہے، اب انجینئرڈ ڈیفالٹ کے ذریعے انتخاب سے روکنے کی کوشش کی جارہی ہے، مجھ پر نام نہاد ڈیمانڈز ڈالی گئیں، مجھے کبھی کسی کی طرف سے اطلاع نہیں دی گئی تھی۔

پرویز رشید کا مزید کہنا تھا کہ انتخاب میں پہلے پیسوں کے ذریعے خریدنے کی کوشش کی جاتی تھی، لوگوں کو دباؤ بلیک میلنگ اور مرضی سے ووٹ کیلئےاستعمال کیا جاتا تھا، اب الیکشن کمیشن آف پاکستان کو بھی اس میں فریق بنا لیا گیا ہے۔

پرویزرشید کا مزید کہنا تھا کہ جس محکمے کی طرف سے ڈیمانڈ کی گئی اور کہا گیا کہ میں نے رقم ادا کرنی ہے، رقم ادا کرنے جاتا ہوں تو افسران اپنی نشستوں اور دفاترسے غائب ہوجاتے ہیں، مجھے کوئی بینک اکاؤنٹ نمبر نہیں دے رہے جہاں رقم جمع کرادوں، جعلی ڈیمانڈ ختم کرنے کیلئے پیسے جمع کرانا چاہتا ہوں کوئی وصول نہیں کررہا ہے۔

سینیٹ انتخابات کے لیے مسلم لیگ ن کے امیدوار پرویز رشید کے کاغذات نامزدگی ریٹرننگ افسر نے مسترد کر دیے ہیں۔ کاغذات نامزدگی کی جانچ پڑتال کا آج آخری دن ہے جس میں امیدواروں پر لگائے کے اعتراضات سنے جا رہے ہیں۔

مسلم لیگ ن کے رہنما پرویز رشید کے کاغذات نامزدگی مسترد ہو گئے،لیگی رہنماپ رویزرشید نادہندگی کے شواہد نہیں پیش کر سکے پرویزرشید پنجاب ہاوَس کے 95 لاکھ روپے کے نادہندہ ہیں

 

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.