fbpx

گوادر شہر میں انٹر نیٹ سروس بحال،کئی شہروں میں بندش میں توسیع

چیف سیکریٹری بلوچستان عبدالعزیز عقیلی کی زیر صدارت اعلی سطحی اجلاس ہوا

اجلاس میں وزیراعظم کے گزشتہ روز کے دورہ صحبت پور کے دوران دی گئی ہدایات پر عملدرآمد کا جائزہ لیا گیا،ایڈیشنل چیف سیکریٹری ترقیات اور دیگر متعلقہ محکموں کے سیکریٹری اجلاس میں شریک تھے ،چیف سیکریٹرینے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بلوچستان میں ترقیاتی عمل جاری رکھنا وفاق کی اولین ترجیح ہے ۔وزیراعظم کی ہدایت پر وفاقی حکومت صوبے میں ترقیاتی عمل پر تیزی سے عملدرآمد کررہی ہے۔ وزیراعظم نے پسماندہ علاقوں کی ترقی اور خوشحالی کا وعدہ کیا ہے ۔پسماندہ علاقوں کی ترقی کیلئے عملی اقدامات کیۓ جارہے ہیں ۔صحبت پور سمیت سیلاب سے متاثرہ دیگر علاقوں کی بحالی میں وزیراعلئ میر عبدالقدوس بزنجو کی مکمل رہنمائی اور تعاون حاصل ہے وزیراعلئ بحالی کے اقدامات کی خود نگرانی کر رہے ہیں ۔وزیر اعظم نے بدھ کے روز سیلاب سے متاثرہ ضلع صحبت پور کا دورہ کیا ۔ وزیراعظم نے صوبائی حکومت کے متاثرین اور ماڈل اسکول کی بحالی کیلئے اٹھائے گئے اقدامات کو سراہا۔وزیراعظم کی ہدایت پر کلی جیا خان ماڈل اسکول میں جنگی بنیادوں پر طلباء کے لئے ہاسٹل، گراؤنڈ اور میس بنائے جائیں ۔ ترقیاتی منصوبوں کی تکمیل کے لیے 24 گھنٹے کام کرم جاری رکھا جائے۔ وزیراعظم نے اعلان کیا ہے کہ پورے بلوچستان میں 12 دانش سکول قائم کئے جائیں گے ۔ وزیراعظم بلوچستان کو دیگر صوبوں کے ساتھ مساوی ترقی دینا چاہتے ہیں ۔۔سکولوں میں ڈیجیٹل لائبریری کا قیام، بس کی فراہمی یقینی بنائی جائے ،کیسکو متعلقہ ضلع میں لوڈ شیڈنگ کم سے کم کرے۔

چیف سیکریٹری نے متعلقہ علاقے میں صحت کی بہترین طبی سہولیات کی فراہمی کی بھی ہدایت کی، اور کہا کہ رواں برس اپریل میں موجودہ حکومت کے برسراقتدار آنے کے بعد سے بلوچستان کی ترقی اولین ترجیح رہی ۔حالیہ تباہ کن سیلاب کے بعد وفاقی حکومت نے بلوچستان کی ترقی کے کئی منصوبوں کی منظوری بھی دی

دوسری جانب ترجمان بلوچستان حکومت کا کہنا ہے کہ گوادر شہر میں انٹر نیٹ سروس بحال کر دی گئی ہے، گوادر میں صورتحال بہتر ہے شہری حکومت کے اقدامات سے مطمئن ہیں امن و امان کی صورتحال کی بہتری کے بعد دس روز کی بندش کے بعد گوادر شہر میں انٹر نیٹ سروس کی بحالی اور دیگر موثر اقدامات جاری ہیں ،صوبائی حکومت گوادر کے عوام کے مسائل کا ادراک رکھتے ہوئے ترجیحی اقدامات اٹھا رہی ہے ۔حکومت بلوچستان نے گوادر میں امن و امان کی صورتحال بہتر ہونے کے بعد تھری جی اور فور جی انٹر نیٹ سروسز بحال کر دیں۔ امن و امان کی صورتحال کو برقرار رکھنے کے لئے گوادر شہر میں موبائل اور انٹرنیٹ سروس عارضی طور پر بند کی تھیں ۔گوادر شہر میں کاروباری اور دیگر سرگرمیاں مکمل طور پر بحال ہیں ۔گودار پورٹ بھی مکمل طور پر فعال ہے پورٹ پر گزشتہ ہفتے سامان سے لدے بحری جہاز لنگر انداز بھی ہوئے۔انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیم ایمنسٹی انٹرنیشنل کی جانب سے گوادر شہر میں انٹر نیٹ کی بحالی کا مطالبہ کیا گیا تھا۔حکومت بلوچستان نے گوادر شہر میں موبائل سروس گزشتہ ہفتے ہی بحال کر دی تھی ۔ساحلی شہروں میں امان و امان کی مکمل بحالی تک انٹرنیٹ سروس کی بندش کو توسیع دی گئی حق دو تحریک کے مسلح مظاہرین کی جانب سے سرکاری دفاتر اور پولیس اہلکاروں پر حملوں کے باوجود حکومت اور پولیس فورس نے صبر و تحمل کا مظاہرہ کیا، اس امر کو مد نظر رکھا گیا کہ اپنے عوام اور ان کی مشکلات کا فوری ازالہ ممکن بنایا جائے ایسے اقدامات اٹھائے جائیں جس سے نہ تو امن و امان کی صورتحال میں بگاڑ پیدا ہو اور نہ شہریوں کو کسی قسم کا نقصان پہنچے۔ پولیس اور انتظامیہ نے مشتعل گروہ کو کنٹرول کرتے ہوئے گوادر شہر کو بے امنی اور افراتفری سے بچانے کی ہر ممکن کوشش کی اس دوران پولیس اہلکارنے اپنی جان کا نذرانہ بھی پیش کیا۔ حکومت اشتعال پھیلانے والی سازشوں کو ناکام بناتے ہوئے گوادر کے عوام کے دیرنیہ مسائل کا نکال رہی ہے

عمران خان کا جھوٹا بیانیہ سب نے دیکھ لیا،آڈیو کے بعد بھی یوٹرن لے سکتے ہیں،عظمیٰ بخاری

 عمران خان جھوٹے بیانیے پر سیاست کر رہے ہیں،