کلبھوشن کیس بھارتی ریاستی دہشت گردی کا واضح‌ ثبوت ہے، ترجمان دفتر خارجہ

عالمی عدالت انصاف کے باہرترجمان دفتر خارجہ اوراٹارنی جنرل پاکستان نے میڈیا سے گفتگو کی اور کہا ہے کہ کلبھوشن یادو کے پاس سے مبارک حسین پٹیل کےنام کا بھارتی پاسپورٹ ملا،

کلبھوشن کی بریت کی بھارتی درخواست مسترد، عالمی عدالت انصاف میں منہ کی کھانا پڑی

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق کلبھوشن یادو کے پاس سےجعلی نام حسین مبارک پٹیل کابھارتی پاسپورٹ ملا، کلبھوشن یادو پاکستان میں جاسوسی ،دہشتگردی کےکئی واقعات میں ملوث تھا، کلبھوشن کی جانب سےدہشتگردی کےواقعات میں کئی پاکستانی جاں بحق ہوئے، کلبھوشن کی جانب سےدہشتگردی کےواقعات میں کئی پاکستانی خواتین بیوہ اوربچےیتیم ہوئے،

رپورٹ کے مطابق کلبھوشن یادو نےان جرائم کااعتراف پاکستان کی عدالت میں سماعت کےدوران کیا، کلبھوشن کاکیس بھارت کی ریاستی دہشتگردی کاواضح ثبوت ہے، عالمی عدالت نےواضح کردیا کمانڈرکلبھوشن یادو پاکستان کی حراست میں رہےگا،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.