fbpx

کراچی کا الیکشن ڈسکہ سے بھی زیادہ متنازع بن چکا، شاہد خاقان عباسی

کراچی کا الیکشن ڈسکہ سے بھی زیادہ متنازع بن چکا، شاہد خاقان عباسی

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق مسلم لیگ ن کے رہنما، سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے کہا ہے کہ الیکشن شفاف نہ رکھا جائے تو سوال کھڑے ہوتے ہیں،

شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ پولنگ افسرسے کہا رات کے 2 بج گئے ، ابھی تک نتیجہ نہیں آیا،سجاد خٹک،ندیم حیدر،عبدالرحمان نے پہلے سے فیصلہ لکھ کررکھا ہوا تھا،کوئی بھی پولنگ اسٹیشن آدھے گھنٹے دور نہیں تھا لیکن رزلٹ نہیں پہنچا جتنی تفصیلات ہم نے حاصل کیں اس میں ہمارے نمبر الیکشن کے غیرحتمی نتیجہ سے بڑھ گئے ہیں 100سے زائد فارم45 ایسے ہیں جن پرپریذائیڈنگ آفیسرکے دستخط نہیں،جب ہم 11بجے آر او کے دفتر پہنچے تو فارم 45 نہیں آئے تھے ،آر او نے کہا میرے پاس تفصیلات نہیں ہیں،آج9بجے ہی ہماری پٹیشن کوالیکشن کمیشن نے مسترد کردیا،ریٹرننگ افسر کہتے ہیں کہ ووٹ کی دوبارہ گنتی نہیں کرائیں گے ہماری درخواست پر الیکشن کمیشن نے کارروائی روک دی ہے الیکشن کمیشن کے افسران بے بس ہیں ،جو آر او ڈیٹا دینے سے انکار کردے اس سےآپ کیا توقع کرسکتے ہیں،ہم نے پٹیشن دے دی ہے،تمام ووٹوں کی دوبارہ گنتی کا فیصلہ کیا جائے،کراچی کا الیکشن ڈسکہ سے بھی زیادہ متنازع بن چکا ہے،

بلاول زرداری نے اہم شخصیت سے استعفیٰ مانگ لیا

کراچی ضمنی الیکشن، ن لیگی امیدوار نے الیکشن کمیشن سے کیا مطالبہ کر دیا؟

این اے 249 انتخابات، شہباز شریف نے دیا ووٹرز کے لئے اہم پیغام

کراچی ضمنی الیکشن، اراکین اسمبلی کو حلقے سے نکال دیا گیا

قبل ازیں مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ آر او نے ابھی تک مفتاح اسماعیل کومہر لگا فارم 45 نہیں دیا، سندھ حکومت نے الیکشن کمیشن کے عملے کو یر غمال بنایا ہوا ہے،ہمیں فارم 45 کی کاپی بھی نہیں دی جا رہی ،چیف الیکشن کمشنردوبارہ گنتی کرانے کا اختیاررکھتے ہیں،اب ہم چیف الیکشن کمیشن کے پاس گئے ہیں،امید رکھتے ہیں چیف الیکشن کمشنر ایکشن لیں گے،اس وقت صوبائی الیکشن کمیشن یرغمال بنا ہوا ہے،پریزائیڈنگ افسرنے آدھے سے زیادہ فارم 45 پر دستخط نہیں کیے،ہمارے پاس تمام شواہد موجود ہیں،

واضح رہے کہ کراچی حلقہ این اے 249 ضمنی الیکشن میں پیپلز پارٹی نے تحریک انصاف کی سیٹ چھین لی پیپلز پارٹی کے قادر خان مندوخیل 16 ہزار 156 ووٹ لے کر کامیاب قرار پائے ہیں، این اے 249 ضمنی الیکشن کے 276 پولنگ سٹیشنز کا غیر حتمی غیر سرکاری نتیجہ موصول ہوگیا۔ ن لیگ کے مفتاح اسماعیل 15 ہزار 473 ووٹ لے کر دوسرے نمبر پر رہے۔ تحریک لبیک کے نذیر احمد 11 ہزار 125 ووٹ لے کر تیسرے ، پاک سر زمین پارٹی کے مصطفیٰ کمال 9 ہزار 227 ووٹ لے کر چوتھے، پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار 8 ہزار 922 ووٹ لے کرپانچویں جبکہ ایم کیو ایم کے امیدوار 7511 ووٹ لے کر چھٹے نمبر پر رہے ہیں

https://baaghitv.com/aik-tirsay-itnay-shikaar-baialwla-ka-ahm-peghaama/

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.