کراچی میں مون سون بارشوں کی وجہ سے تباہی پرشوبز ستارے برہم

0
48

کراچی سمیت سندھ بھر میں مون سون کی تیز ہواؤں کے ساتھ موسلا دھار بارش سے نظام زندگی درہم برہم ہوگیا تھا جبکہ صوبے سمیت شہر قائد کے مختلف حصوں میں سیلابی صورتحال بھی پیدا ہوئی جس پر فنکاروں نے بھی کراچی کے ان حالات پر برہمی کا اظہار کیا-

باغی ٹی وی : گزشتہ روز ہونے والی بارشوں کے نتیجے میں 3 نوجوان جاں بحق ہوئے جبکہ شہر کے چھوٹے نالے ابل پڑے جبکہ ندیوں میں طغیانی کے باعث کا بارش کا پانی علاقوں میں داخل ہونے شہری چھتوں پر پناہ لینے یا نقل مکانی پر مجبور ہوئے۔

کراچی میں شادمان، لانڈھی، کورنگی، ملیر، ڈیفنس، عائشہ منزل، ناظم آباد، گلشن اقبال، لیاری سمیت متعدد علاقوں میں سڑکیں دریا کے مناظر پیش کرنے لگیں شاہراہ فیصل پر گاڑیاں اور موٹر سائیکلیں بند ہونے سے لوگ شدید اذیت کا شکار ہوئے۔

کئی علاقوں میں نالے اور گٹر ابل پڑے جبکہ ناگن، پی ای ایس ایچ، نرسری اور ملحقہ علاقوں میں نالے کا پانی گھروں میں داخل ہوگیا جس کے باعث مکینوں کا قیمتی سامان خراب ہوگیا جبکہ گلیوں اور سڑکوں پر کھڑی گاڑیاں بھی پانی میں ڈوب گئیں۔

شہر میں صدر اور ٹاور کے اطراف میں دفاتر اور دکانوں میں بھی پانی بھر گیا جبکہ سرجانی ٹاؤن، نارتھ کراچی اور ملحق علاقوں میں 3 سے 4 فٹ پانی کھڑا ہے، اسی طرح شدید بارش کے نتیجے میں ملیر ندی میں طغیانی کے باعث کورنگی کازوے بند ہوگیا۔

اس کے علاوہ کراچی کے بڑے ہسپتالوں آغا خان اور ضیاالدین (ناظم آباد) میں بھی بارش کا پانی داخل ہوگیا جس کی وجہ سے مریضوں اور ان کے تیمارداروں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔

طوفانی بارشوں سے پیدا ہونے والی صورتحال سے شہر بھر کے عوام مشکلات کا شکار ہیں جبکہ صوبائی حکومت کی جانب سے سندھ میں گزشتہ روز رین ایمرجنسی نافذ کردی تھی۔

جہاں عوام حکومت سندھ سے نالاں دکھائی دیتے ہیں وہیں شوبز شخصیات نے بھی بارش کے نتیجے میں کراچی ڈوبنے پر برہمی کا اظہار کیا۔

اداکار یاسر حسین نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ انسٹاگرام اسٹوریز میں برہمی کا ظہار کرتے ہوئے لکھا کہ کراچی کو سب نے مل کر برباد کیا ہے حسین شہر ہے یہ کچرا دان بنادیا ہے۔


یاسر حسین نے لکھا کہ مدت سے پنپتی ہوئی سازش نے ڈبودیا کہنے کو میرے شہر کو بارش نے ڈبودیا۔

اداکارہ ثروت گیلانی کے شوہر اداکار ڈاکٹر فہد مرزا اپنی ڈیوٹی پر ہسپتال گئے تھے تاہم ہسپتال سے واپسی پر ان کی گاڑی ڈوب گئی تھی۔

انہوں نے اپنی مختلف ویڈیوز میں کہا تھا کہ یہ انتہائی شرمناک ہے میں آپریٹ کرنے کے لیے این ایم سی گیا تھا اور واپسی پر میری گاڑی پانی میں ڈوب گئی۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کا سب سے بڑا شہر ہے اور ایک سرجن کام سے واپس نہیں آسکتا یہ انتہائی شرمناک ہے۔

قومی کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان وسیم اکرم کی اہلیہ اور سماجی کارکن شنیرا اکرم نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر کئے گئے ٹوئٹ میں تالاب کا منظر پش کرتی سڑکوں کی ویڈیو پوسٹ کی۔


ویڈیو ٹوئٹ کرتے ہوئے کیپشن میں انہوں نے لکھا کہ کرنٹ لگنا، ڈوبنا، املاک کو ناقابل تلافی نقصان، زہریلا ہونا، یپاٹائٹس، ٹائیفائیڈ، پولیو کے پھیلاؤ کا خطرہ، ڈینگی اور ملیریا جیسی بیماریاں کراچی ایمرجنسی کی حالت میں کیسے نہیں ہے؟

شنیرا اکرم کے اس ٹوئٹ کا جواب دیتے ہوئے فخر عالم نے لکھا کہ کراچی لاتعلقی کی حالت میں ہے، یہ بات سب کو حیران کرتی ہے کہ ملک کا سب سے بڑا شہر وقت کے ساتھ ساتھ تنزلی کی طرف گیا ہے۔


فخر عالم نے لکھا کہ میں کسی سیاسی تعصب کے بغیر بطور شہری کہتا ہوں کہ یہ تقریباً ایسا ہی ہے کہ کراچی کے شہریوں نے اسے تنہا چھوڑ دیا ہے۔


شنیرا اکرم نے پانی میں ڈوبے ہسپتال کی ویڈیو شئیر کرتے ہوئے لکھا کہ میں اس سے وابستہ مسائل کی شدت کا تصور بھی نہیں کرسکتی-


شنیرا نے کراچی میں لینڈ سلائیڈنگ کی ویڈیو شئیر کرتے ہوئے غم کا اظہار کرتے ہوئے لکھا کہ کراچی لفظی طور پر الگ ہو رہا ہے-


اداکارہ منشا پاشا نے گلستان جوہر ایریا کراچی میں لینڈ سلائیڈنگ کی تصاویر شئیر کرتے ہوئے دعا کی کہ سب ان قدرتی آفات سے محفوظ رہیں

معروف آر جے اور اداکار علی سفینہ نےکہا کہ شکایت کے بجائے ہم سب کو کچھ مثبتیت پھیلانی چاہیے۔


انہوں نے لکھا کہ کراچی کے ان تمام شہریوں کو سلام جو سڑکوں پر پھنسے لوگوں کی مدد کررہے ہیں لوگوں کو اپنے پیاروں تک باحفاظت پہنچا رہے ہیں لوگ ایسا اس لیے نہیں کررہے کہ یہ ان کی ڈیوٹی ہے بلکہ وہ اس لیے کررہے ہیں کیونکہ وہ خیال رکھتے ہیں۔

واضح رہے کہ اس سے قبل گزشتہ روز پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور مشہور آل راؤنڈر شاہد آفریدی نے کراچی میں ریکارڈ بارش سے ہونے والے بدترین حالات پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا تھا کہ اب چپ رہنا مجرمانہ خاموشی ہوگی۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے بیان میں شاہد آفریدی نے کہا تھا کہ کراچی کے حالات پر اب چپ رہنا، مجرمانہ خاموشی ہے، دل خون کے آنسو روتا ہے’۔انہوں نے کہا تھا کہ ‘کے الیکٹرک کی بجلی صبح سے نہیں ہے، سڑکیں ٹوٹ پھوٹ کا شکار، گلیاں پانی سے بھر گئی ہیں اور لوگ ڈوب رہے’۔

شاہدآفریدی نے کراچی کے حوالے سے کہا تھا کہ ‘گٹرابل رہے ہیں، کچرا بستیاں نگل رہا ہے، مقامی، صوبائی اور وفاقی حکومتیں مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہیں’۔ان کا کہنا تھا کہ ‘ہم نے بھی اپنے بچپن میں اس شہر کو ایسے ہی تباہ ہوتے دیکھا تھا اور شرم آتی ہے کہ اب ہمارے بچے بھی اس کی بربادی کے گواہ ہیں’۔

مشہور کرکٹر نے کہا تھا کہ ‘سیاسی وابستگیوں سے قطع نظر، ملک کا سب سے بڑا اور سب سے زیادہ سرمایہ دینے والا شہر میں انتظامیہ کی سب سے بڑی ناکامی ثابت ہو چکی ہے’۔انہوں نے کہا کہ ‘کاش دنیا کے کسی میٹروپولیٹن سے ہی سیکھ لیں اور مصنوعی جھیلیں بنا لیں’۔

شاہد آفریدی نے شکوہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ ‘کیا یہ ہمارا قصور ہے کہ رہنے کے لیے اس شہر کا انتخاب کیا، یہاں ٹیکس دیتے ہیں لیکن بدلے میں انتظامیہ کون سی ذمہ داری پوری کرتی ہے’۔سابق کپتان نے کہا کہ ‘کراچی کو کچراچی بنانے والوں کے گریبان پر ہاتھ کون ڈالے گا’۔

کراچی تو ڈوبا ، شہر قائد میں کے الیکٹرک نے بھی اندھیر مچا دیا

کراچی کے جن علاقوں‌ میں‌ سب سے ز یادہ بارش ہوئی

پانی کی نذر ہوتا کراچی دیکھ کر وفاقی وزیر علی حیدر زیدی نے 2 ہفتوں کی خاموشی توڑ دی

بارش سے کراچی جیسے شہر میں لینڈ سلائیڈنگ شروع ہوگئی

کراچی بارش ، ملیر ندی پر قائم پل پانی میں بہہ گیا، سٹرکوں‌ نے دریاؤں کا روپ دھار…

کراچی پہلے ہی سیلاب زدہ ، بارش کا سلسلہ جمعرات تک جاری رہنے کا امکان

وزیر اعلیٰ‌سندھ بھی کراچی کی سٹرکوں‌ پر

Leave a reply