کراچی: محکمہ صحت سندھ نے کورونا ویکسین لگوانے سے انکار کرنے والے ہیلتھ ورکرز کے خلاف کارروائی شروع کردی

کراچی: محکمہ صحت سندھ نے کورونا ویکسین کا دائرہ کار مزید بڑھاتے ہوئے ویکسین لگوانے سے انکار کرنے والے ہیلتھ ورکرز کے خلاف کارروائی شروع کردی کورونا ویکسین کا دائرہ کار اب فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز سے بڑھاکرنجی شعبے کے بھی تمام ڈاکٹرز اور ہیلتھ ورکرز تک پھیلادیا گیا ہےچین سے درآمد کی گئی ویکسین دو خوراکوں پر مشتمل ہے جو 21 روز کے وقفے سے لگے گی محکمہ صحت کے حکام نے توقع ظاہر کی ہے کہ آئندہ چند ہفتوں کے دوران کورونا ویکسین دیگر سرکاری اداروں کے ملازمین سمیت عام افراد کے لیے بھی دستیاب ہوگی۔ ڈویژنل سطح پر قائم کورونا ویکسین مرکز میں میرپورخاص، عمرکوٹ اور تھرپارکر اضلاع کے فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز کو ویکسین لگانے کا سلسلہ جاری ہے تاہم بعض ہیلتھ ورکرز کی جانب سے لازمی ویکسین سے انکار کا بھی انکشاف ہوا ہے جس کے بعد ان کے خلاف محکمانہ کارروائی شروع کردی گئی ہے محکمے کی پالیسی یہ ہے کہ ویکسینیشن سےکوئی منع نہیں کرسکتا اور اگر منع کرے گا تو اس کو جو بینیفٹ الاؤنسز ملے ہیں وہ روک دیے جائیں گے بلکہ ری ایمبرز بھی ہوں گے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.