fbpx

کراچی میں بلدیاتی انتخابات کیلئے52ہزارسےزائد پولیس اہلکارفرائض انجام دیں گے

کراچی:بلدیاتی انتخابات کیلئے پالیس کی جانب سےسیکیورٹی پلان مرتب کرلیا گیا ہے جس کےتحت 52 ہزارسےزائد پولیس اہلکار فرائض انجام دیں گے۔تفصیلات کے مطابق کراچی میںبلدیاتی انتخابات کے لیے پولیس کا سیکیورٹی پلان تیار کرلیا گیا ہے۔

سندھ حکومت نے بلدیاتی الیکشن ملتوی کرنے کیلئے الیکشن کشمنر کو خط لکھ دیا

اس حوالے سے پولیس حکام کا کہنا ہے کہ شہر بھر میں 52 ہزار 591 اہلکار سیکیورٹی کے فرائض انجام دیں گے جس میں 35 ہزار 3 سو 60 اہلکارکراچی کی نفری ہے اور 17ہزار 2سو 31 اہلکار سندھ کے دیگر اضلاع سےکراچی لائے گئے ہیں۔

پولیس حکام نے بتایا کہ اندرون سندھ سے ساوتھ زون میں 27 سو اہلکار لائے گئے ہیں جبکہ سندھ سے ایسٹ زون میں 6 ہزار 8 سو33 اہلکار لائے گئے ہیں اور ویسٹ زون میں 7 ہزار 6سو 98 اضافی نفری منگوائی گئی ہے۔حکام کے مطابق سندھ بھر کے ٹریننگ سینٹرز ،سی ٹی ڈی یونٹ ،ایس ایس یو یونٹ اور ضلعی نفری بلوائی گئی ہے۔

تم آرڈیننس لاؤ گے ہم اس کا بھی عدالتوں میں مقابلہ کریں گے، حافظ نعیم الرحمان

پولیس حکام نے بتایا ہے کہ انتہائی حساس پولنگ اسٹیشن میں 6 سے 8 اہلکار تعینات ہونگے تاہم نگامی صورحال سے نمٹنے کے لئے ریزرو فورس کو فوری استعمال کیا جائے گا۔

موجودہ حالات میں حکومت کا ساتھ جاری رکھیں،گورنر سندھ کی خالد مقبول صدیقی سے…

دوسری جانب وزارت داخلہ نے 500 پولنگ سٹیشنز پر رینجرز کی اسٹیٹک ڈیوٹی کی یقین دہانی کرادی ہے جس کے بعد الیکشن کمیشن کی جانب سے 500 انتہائی حساس پولنگ اسٹیشنز کی فہرست تیار کرلی گئی ہے۔الیکشن کمیشن کی جانب سے 500 انتہائی حساس پولنگ اسٹیشنز کی فہرست وزارت داخلہ کو بھجوا دی گئی جس میں 5 ہزار رینجرز اہلکاروں کی اسٹیٹک ڈیوٹی کی درخواست کی گئی ہے۔

خیال رہے کہ وزارت داخلہ کی منظوری کے بعد رینجرز اہلکاروں کی تعیناتی کی جائے گی تاہم الیکشن کمیشن کی جانب سے آج شام سے رینجرز اہلکاروں کو تعینات کرنے کی درخواست کی گئی ہے۔