fbpx

کراچی نیب نے محکمہ اسکول ایجوکیشن میں1989سے بھرتی شدہ اساتذہ اور غیر تدریسی عملے کی تفصیلات طلب کرلیں

قومی احتساب بیورو ( نیب ) نے محکمہ اسکول ایجوکیشن اور اسکے تمام ذیلی اداروں میں1989سے بھرتی ہونیوالے اساتذہ اور غیر تدریسی عملے کی تفصیلات طلب کر لیں جس کے بعد محکمہ تعلیم سندھ نے اپنے تمام شعبہ جات کے سربراہان کو ہدایت کی ہے کہ تمام عملے کے عہدے کے مطابق نام، شناختی کارڈ نمبر، فون نمبر، گھر کا پتہ، بھرتی کی ابتدائی جگہ اور موجودہ جگہ پر موجودگی، اصل سروس بک سمیت دیگر تفصیلات محکمہ کو فوری فراہم کی جائے اوراگر کسی بھی غیر قانونی بھرتیوں کے خلاف کارروائی کی گئی ہے تو اس کی بھی رپورٹ بھی اسکے ساتھ منسلک کی جائے۔ واضح رہے محکمہ اسکول ایجوکیشن کے ذرائع کے مطابق محکمہ تعلیم میں 1989سے غیر تعلیم یافتہ اور اسامیوں کے لیے مطلوب اسناد کے بغیر بھرتیاں کرنے کا انکشاف ہوا تھا جس میں اساتذہ، ٹیکنیشن اور غیر تدریسی عملے سمیت ہزاروں کی ملازمین شامل تھے جس کی روشنی میںقومی احتساب بیورو نے محکمہ اسکول ایجوکیشن کو خط لکھ کر اس مدت کے دوران بھرتی ہونیوالوں کی تفصیلات فراہم کرنے کی ہدایت کی تھی۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.