fbpx

کراچی پولیس کا ایک عجیب کارنامہ سامنے آگیا

کراچی پولیس کا ایک عجیب کارنامہ سامنے آیا ہے،کراچی پولیس نشے کے عادی 100 سے زائد افرد کو سجاول میں چھوڑکررفوچکرہوگئی ۔تفصیلات کے مطابق کراچی پولیس کی ایک ٹیم ہیروئن کے عادی سو سے زائد نشیئوں کو ایک بس میں بھر کر رات کے اندھیرے میں سندھ کے شہر سجاول میں درگاہ شاہ عقیق پر چھوڑ کر رفو چکر ہو گئی۔
ادھر نشئی افراد کو درگاہ شاہ عقیق پر چھوڑے جانے کی خبروں پر سجاول پولیس میں کھلبلی مچ گئی، خبر ملتے ہی مقامی پولیس حرکت میں آ گئی۔ذرائع کے مطابق سجاول کے نواحی علاقے چوہڑ جمالی میں صبح ہوتے ہی شہریوں میں اس وقت خوف و ہراس پھیلا، جب انھوں نے متعدد نشیئوں کا ایک ہجوم دیکھا۔ بہت سارے نشئی افراد نے جب ایک ساتھ مختلف علاقوں کا رخ کیا، تو پاگلوں کی طرح شہر کے بیچ میں تماشا بن گئے۔
معلوم ہوا ہے کہ کراچی پولیس نے تنگ آ کر نشئی افراد کو سجاول میں چوہر جمالی میں چھوڑا، نشئی افراد نے اس حوالے سے کہا کہ اگر انھیں واپس کراچی نہیں بھیجا گیا تو وہ یہاں بڑا تماشا کریں گے۔ایوب گوٹھ نیو کراچی کے ایک نشئی نے بتایا کہ تقریبا دو سو افراد کو پکڑا گیا تھا، پولیس اہل کاروں نے بتایا کہ بڑے صاحب آ رہے ہیں، تھانے کی صفائی کرنی ہے، اس کے بعد چھوڑ دیں گے، مجھے گہری نیند سے اٹھایا گیا، لیکن پھر ہمیں یہاں لا کر چھوڑ دیا۔
مقامی شہریوں نے آئی جی سندھ سے کراچی پولیس کے اس عجیب رویے کے خلاف فوری نوٹس لے کر ان افراد کو واپس لے جانے کے ساتھ ساتھ منشیات فروشوں کے خلاف اعلی سطح پر کارروائی کا مطالبہ بھی کیا۔دوسری طرف سجاول پولیس نے چوہڑ جمالی درگاہ شاہ عقیق و دیگر علاقوں میں چھاپے مارے، اور متعدد نشیئوں کو پکڑ لیا، سجاول پولیس ان کو پکڑ کر واپس کراچی روانہ کرنے کی تیاریاں کر رہی ہے۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!