fbpx

کراچی والوں کو نئے سال کا تحفہ نہیں ملے گا

کراچی والوں کو نئے سال کا تحفہ نہیں ملے گا، شہر قائد کا سب سے پہلا جدید ماس ٹرانزٹ منصوبہ گرین لائن مزید تاخیر کا شکار ہو گیا۔

تفصیلات کے مطابق 2 ہفتے قبل اعلان کیا گیا تھا کہ دنیا کے سب سے تباہ حال پبلک ٹرانسپورٹ نظام والے شہر کراچی کے پہلے اور جدید ماس ٹرانزٹ منصوبے کو آپریشنل کرنے کے حوالے سے اہم پیش رفت ہوئی ہے۔
دعویٰ کیا گیا کہ وزیراعظم عمران خان رواں ماہ کراچی گرین لائن بس منصوبے کا افتتاح کر دیں گے، اس حوالے سے گورنر سندھ عمران اسماعیل نے وزیراعظم کو خصوصی بریفنگ بھی دی۔ تاہم اب نجی ٹی وی چینل کی رپورٹ کے مطابق رواں سال کے دوران گرین لائن منصوبے کے افتتاح کے امکانات نظر نہیں آ رہے۔ گرین لائن ٹریک پر تعمیر شدہ کئی اسٹیشنز کی حالت انتہائی خراب ہے، جہاں سے قیمتی الیکٹرانک اور دیگر سامان چوری کیا جا چکا۔

وفاقی وزراء گرین لائن منصوبے کے افتتاح کی کئی تاریخیں دے چکے، تاہم تاحال منصوبہ آپریشنل نہیں ہو سکا۔ یاد رہے کہ کراچی گرین لائن بس منصوبے کیلئے 80 جدید بسیں کراچی پہنچ چکی ہیں۔ منصوبے کیلئے چین میں تیار کی جانے والی جدید بسیں 2 علیحدہ شپ منٹس کے ذریعے کراچی پہنچائی گئیں۔ حکام کے مطابق پہلے فیز میں گرین لائن بسیں سرجانی ٹائون سے نمائش چورنگی(گرومندر)تک چلائی جائیں گی، جہاں اب تک ٹریک مکمل ہوچکا ہے۔
واضح رہے کہ یہ منصوبہ 2016 میں شروع ہوا تھا۔ کراچی گرین لائن منصوبے کے لیے بسیں فراہم کرنے والی کمپنی کے مطابق کراچی کی بسیں لاہور، اسلام آباد اور پشاور میں چلنے والی بسوں کے مقابلے میں سب سے زیادہ جدید ہیں، یہ بسیں یورو تھری معیار کی اور ہائبرڈ ہیں ، ان میں ڈیزل کے ساتھ خودکار طریقے سے چارج ہونے والی بیٹری بھی استعمال ہوگی جس سے ایندھن کی بچت کے ساتھ ماحول کو بھی فائدہ ہوگا۔
بسوں میں خصوصی سسٹم نصب ہے جو انجن میں آگ لگنے کی صورت میں خودکار طریقے سے آگ بجھائے گا۔18 میٹر لمبی بسوں میں 40 نشستیں ہیں۔ کھڑے ہوکر اور نشستوں پر بیک وقت 150 افراد سفر کرسکیں گے، زیادہ رش کی صورت میں 190 مسافروں کی گنجائش ہوگی۔ بسوں میں معذور افراد کے لیے جگہ خصوصی ہے اور خودکار ریمپ نصب ہے۔ ہر بس میں دو وہیل چیئرز کی جگہ مخصوص ہے۔ بسوں میں خواتین اور معذور افراد کیلئے مخصوص نشستیں ہوں گی۔ کراچی گرین لائن ٹرانسپورٹ منصوبے کے لیے بنائی گئیں ہائبرڈ بسیں چین میں تیار کی گئی ہیں۔کراچی کی روائتی لوکل بسوں کی نسبت یہ بسیں لمبی اور مکمل ایئرکنڈیشنڈ ہوں گی۔ ہر بس میں 200 سے 250 افراد کے سفر کرنے گنجائش موجود ہے۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!