مسئلہ کشمیر کا حل خطے کے امن اور استحکام کے لیے ناگزیر ہے؛ اسپیکر قومی اسمبلی

اسلام آباد:مسئلہ کشمیر کا حل خطے کے امن اور استحکام کے لیے ناگزیر ہے؛ اسپیکر قومی اسمبلی،اطلاعات کے مطابق اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے کہا ہے کہ آزادی کی خاطر کشمیریوں نے لازوال قربانیاں دی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کے ہاتھوں شہید ہونے والے ان نہتے کشمیریوں کا خون رائیگاں نہیں جاے گا اور وہ دن دور نہیں جب کشمیری کے باسی اپنی حق خودارادیت کی جدوجہد کے ذریعے کشمیر میں آزادی کا سورج طلوع ہوتا ہوا دیکھیں گے۔ انہوں نے کہا کہ مسئلہ کشمیر برصغیر کی تقسیم کا نامکمل ایجنڈا ہے جسے حل کیے بغیر جنوبی ایشیاء میں امن کا قیام ناممکن ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے یوم شہدائے کشمیر کے موقع پر اپنے پیغام میں کیا، جو 13 جولائی کو پورے ملک میں عقیدت و احترام کے ساتھ منایا جائے گا۔

سپیکر اسد قیصر نے کہا کہ گزشتہ 11 ماہ سے کشمیر میں بھارت کی فاشسٹ حکومت کی جانب سے جبری لاک ڈاؤن جاری ہے، جس کے باعث ہزاروں کشمیری شہید ہو چکے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ کشمیر میں گزشتہ 72 سالوں سے ہزاروں ماؤں کے جگر کے ٹکڑے ان سے چھینے جا چکے ہیں اور خواتین کی بے حرمتی اور عصمت دری کے ہزاروں ایسے واقعات رونما ہو چکے ہیں جس کی دنیا میں کوئی مثال نہیں ملتی۔ انہوں نے کہا کہ بھارت کی نام نہاد جمہوری حکومت نے اپنے ہاتھ ہزاروں کشمیری شہداء کے لہو سے رنگے ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کرفیو کے باعث کشمیری عوام کو بنیادی ضروریات زندگی کی روزمرہ کی اشیاء خوردونوش کی کمی کا سامنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خوراک اور ادویات کی قلت کی وجہ سے لاکھوں انسان کسمپرسی کی زندگی بسر کرنے پر مجبور ہیں جس کی وجہ سے بچوں اور بزرگوں کی زندگیوں کو زندگی سے ہاتھ دھونے کے شدید خطرات لائق ہیں۔ انہوں نے عالمی برادری پر زور دیا کہ وہ کشمیر میں بھارت کی طرف سے ڈھائے جانے والے مظالم کا سختی سے نوٹس لے۔

سپیکر اسد قیصر نے کہا کہ خطے میں پائیدار امن کے قیام کے لیے مسئلہ کشمیر کا حل ناگزیر ہے۔ انہوں نے اس خدشے کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ مسئلہ کشمیر حل نا ہونے کی وجہ سے خطہ کسی بڑی جنگ کی دلدل میں پھنس سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خطے کو جنگ کی ہولناکیوں سے بچانے کے لیے اقوام متحدہ کو سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق مسئلہ کشمیر کا کشمیری عوام کی امنگوں کے مطابق پرامن حل تلاش کرنے میں اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ انہوں نے اقوام متحدہ پر زور دیا کہ وہ بھارت پر سلامتی کونسل کی قراردادوں کے مطابق مسئلہ کشمیر حل کرنے پر دباؤ ڈالے۔

اسپیکر نے کشمیری عوام کی جدوجہد آزادی کے لیے پاکستان کی حمایت اور اصولی موقف کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ پاکستانی حکومت اور عوام کشمیری عوام کی حقِ خودارادیت کی جد و جہد کی ہر فورم پر اخلاقی، سیاسی اور سفارتی حمایت جاری رکھے گا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی پارلیمنٹ مسئلہ کشمیر کے پرامن حل کے لیے پر عزم ہے اور اس سلسلہ میں پارلیمنٹ نے مسئلہ کشمیر کو اقوامِ متحدہ کی سیکورٹی کونسل کی قراردادوں کے مطابق حل کرنے اور مقبوضہ وادی میں بھارتی افواج کی طرف سے ہونے والے ظلم و بربریت کو روکنے کے لیے متعدد قراردادیں منظور کی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر میں بھارت کی طرف سے طاقت کے بل بوتے پر قبضہ جدید معاشرے کی اخلاقی اقدار اور عوام کے بنیادی حقِ خودارادیت کے منافی ہے۔

اس موقع پر ڈپٹی اسپیکر قاسم خان سوری نے کہا کہ شہدائے کشمیر کی جدو جہد اور ان کا خون رائیگاں نہیں جائے گا۔ انہوں نے اس امید کا اظہار کیا کہ کشمیری بہت جلد آزادی کا سورج طلوع ہوتا دیکھیں گے اور انہیں آزاد فضا میں سانس لینے کا موقع ملے گا۔ ڈپٹی سپیکر نے کہا کہ پاکستانی حکومت اور عوام اس مشکل گھڑی میں اپنے کشمیری بہین بھائیوں کے ساتھ ہیں اور ان کی اخلاقی، سیاسی اور سفارتی حمایت جاری رکھیں گے۔انہوں نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کی عوام کو خوراک اور ادویات کی قلت کا سامنا ہے جس کی وجہ سے لاکھوں انسانوں کی زندگیوں کو شدید خطرہ لاحق ہے۔ انہوں نے عالمی برادری پر زور دیا کہ وہ کشمیر میں بھارت کی طرف سے ڈھائے جانے والے مظالم کا سختی سے نوٹس لے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.