مقبوضہ کشمیر، پی ڈی پی کی مقامی لیڈر پر مقدمہ کیخلاف اجتماعی گرفتاریوں کی دھکمی

پیپلز ڈیمو کریٹک پارٹی (پی ڈی پی) سے وابستہ کارکنان کی کثیر نے کشتوار میں سوموار کو اپنے ایک مقامی رہنما پر کیس درج کرنے کیخلاف احتجاجی مظاہرہ کیا کیا ہے. احتجاجی مظاہرین نے دھمکی دی کہ اگر فردوس ٹاک کیخلاف درج کیس واپس نہ لیا گیا تو وہ احتجاجی طورپر گرفتاریاں دینے کا سلسلہ شروع کریں گے،

باغی ٹی وی کی رپورٹ‌کے مطابق پی ڈی پی کارکنان کی کثیر تعداد نے پولیس سٹیشن کشتواڑ کے باہر جمع ہوکر مظاہرہ کیا اور انتظامیہ پر الزام عاید کیا کہ وہ ایک خاص سیاسی پارٹی کے دباؤ میں آکر کام کررہی ہے، مظاہرین نے فردوس ٹاک کیخلاف دائر کیس واپس لینے کا مطالبہ کیا اور کہا کہ اگر ایسا نہیں کیا گیا تو وہ اجتماعی گرفتاریاں پیش کریں گے،

واضح رہے کہ رواں ماہ 20 تاریخ کو بھارتی پولیس نے فردوس ٹاک کیخلاف”اشتعال انگیز”تقریر کرنے کی پاداش میں مقدمہ درج کیا تھا، انہوں نے یہ تقریر کشتوار میں ”دیہی دفاعی کمیٹیوں” کو مضبوط بنانے کیخلاف احتجاج کرتے ہوئے کی تھی جن پر انسانی حقوق کی پامالیوں کے سنگین الزامات ہیں،

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.