کشمیری لیڈر شکیل احمد بخشی قاتلانہ حملہ میں‌ بال بال بچ گئے، مشعال ملک کی مذمت

0
73

مقبوضہ کشمیر میں اسلامک سٹوڈنٹس لیگ کے چیئر مین شکیل احمد بخشی نا معلوم بندوق برداروں کے ایک حملے میں بال بال بچ گئے ہیں تاہم وہ نیچے گرنے سے زخمی ہوگئے ہیں، جے کے ایل ایف لیڈر محمد یٰسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک نے اس حملہ کی شدید مذمت کی ہے،

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق ۔شکیل احمد بخشی کے چھوٹے بھائی شوکت احمد نے سماجی رابطہ گاہ فیس بک پر پوسٹ کرتے ہوئے لکھا’’ انکے بڑے بھائی شکیل احمد بخشی پر گھر کے قریب قاتلانہ حملہ کیا گیا تاہم وہ معجزاتی طور پر بچ گئے‘‘۔بتایا جاتا ہے کہ دو موٹر سائیکل سواروں نے غوثیہ کالونی بمنہ میں انکی رہائش گاہ کے باہر شام کے وقت اُن پر فائرنگ کی، تاہم وہ بچ گئے البتہ نیچے گرنے سے انہیں چوٹ آئی۔ شکیل احمد بخشی نے ایک ویڈیو پیغام میں اس بات کی تصدیق کرتے ہوئے کہا کہ جس راہ پر وہ چل رہے ہیں اُس پر اس طرح کے معاملات آسکتے ہیں تاہم 1990سے وہ سچائی کی راہ سے نہ کبھی بھٹک گئے ہیں اور نہ آئندہ ایسی کوئی اُمید کی جاسکتی ہے۔

واضح‌ رہے کہ 1996 میں بھی سرکاری بندوق برداروں کی تنظیم اخوان کے اہلکاروں نے ان پر حملہ کیا تھا تاہم وہ محفوظ رہ تھے، ایس ایس پی سرینگر ڈاکٹر حسیب مغل نے کہا کہ انہوں نے واقعہ سے متعلق کیس درج کیا ہے اور علاقے میں ناکے لگائے گئے تاکہ حملہ آوروں کو گرفتار کیا جاسکے، شکیل احمد بخشی، اسلامک سٹوڈنٹس لیگ کے چیئر مین ہیں، یٰسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک نے شکیل احمد بخشی پر قاتلانہ حملہ کی شدید مذمت کی ہے،

Leave a reply