قصور جنسی سیکنڈل،باغی ٹی وی کی خبر پر پولیس کی کاروائی، مرکزی ملزم گرفتار

قصور گزشتہ روز باغی ٹی وی نے نجی پرائیویٹ میڈیکل کالج میں طالبات کو ہراساں کرنے کی خبر شائع کی تھی جس پر کاروائی کرتے ہوئے پولیس نے مرکزی ملزم کو گرفتار کر لیا-

باغی ٹی وی : طالبہ کے والد فاروق احمد نے تھانہ صدر میں پرنسپل محمد احمد چوہدری کے خلاف کارروائی کیلئے مقدمہ نمبر32/21 درج کروا تھا پولیس تھانہ صدر نے مقدمہ درج کرکے کارروائی شروع کر دی جبکہ مقدمہ کے مدعی نے پرنسپل کے خلاف سخت کارروائی اور میڈیکل کالج بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ٹریٹمنٹ پلانٹ کے نزدیک واقع پرائیویٹ زینب انسٹی ٹیوٹ میڈیکل کالج میں زیر تعلیم طالبہ انعم فاروق کے والد فاروق احمد نے انکشاف کیا کہ مذکورہ کالج میں پرنسپل طالبات کو ہراساں کرتا ہے۔

کوٹ سردار کے رہائشی نے درج کرائی گئی ایف آئی آر میں فاروق احمد نے مؤقف اختیار کیا کہ پرنسپل محمد احمد چوہدری میری بیٹی کو کالج میں ہراساں اور پریشان کرنے کے ساتھ چھیڑ خانی کرتا ہے۔بذریعہ موبائل فون بلیک میل کرتا ہے جس کی ریکارڈنگ موجود ہے۔جس میں وہ میری بیٹی کو ہراساں کرنے علاوہ اسے کہتا ہے کہ اگر تم نے کسی کو بتایا تو تمہیں اور تمہارے والد کو جان سے ماردوں گا۔

فاروق احمد کے مطابق ملزم ایک فحاش انسان ہے اور کالج میں پڑھنے والی طالبات کو ہراساں،چھیڑ خانی اور بلیک میل کرتاہے۔زینب انسٹی ٹیوٹ میڈیکل کالج کے پرنسپل محمد احمد چوہدری کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے اور مذکورہ کالج کو فوری طور پر بند کیاجائے طالبات مزید ہراساں ہونے سے بچ سکیں اور ان کی عزتیں محفوظ رہیں۔

جس کے بعد اس ایف آئی آر کی کاپی باغی ٹی وی نے حاصل کی اور اس سکینڈل کے خلاف آواز اٹھائی جس پر پولیس نے بذریعہ ایس آئی ظفر اللہ نے تحقیقاتی کمیٹی تشکیل دی اور ملزم کو با ضابطہ ایف آئی آر میں درج شدہ مقدمات میں باضابطہ گرفتار کر کے درست گنہگار پا کر مقدمہ کا چالان مرتب کیا گیا-
مرکزی ملزم پپونلکا

قصور میں ایک اور جنسی اسکینڈل:پرائم منسٹر صاحب کو ان واقعات کی جانب خود توجہ دینی…

جنسی زیادتی کے بڑھتے واقعات بحثیت ایک قوم اور اسکے ذمہ داران کی مجرمانہ غفلت کا…

قصور میں ایک اور بڑا جنسی سیکنڈل ۔ایک ہی تعلیمی ادارے میں سو سے زائد طالبات کے…

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.