قصور پولیس کی صحافی کے ساتھ ناانصافی

0
23

قصور
پولیس نے اپنی حالت نہ بدلی جو کہ ڈی پی او قصور اور آئی جی پنجاب کے لیے سوالیہ نشان
تفصیلات کے مطابق تھانہ تھ شیخم کے SHO علی اکبر اور چوکی انچارج بلال احمد قبضہ مافیا کے سرپرست بن گئے صحافی فہیم قاسم کے خلاف 15 پر کال کرنے پر جھوٹی ایف آئی آر درج کر دی ڈی ایس پی اور ڈی پی او قصور سے بھی انصاف نہیں ملا تو عدالت سے رجوع کرنے پر مجبور ہونا پڑا جبکہ پولیٹ صحافی فہیم قاسم سے انتقام لینے کی خاطر زیر سماعت مقدمہ جس کا سٹے آڈر لے رکھا ہے 19 اکتوبر قبضہ مافیا نے دوبارہ پولیس سے مل کر توہین عدالت کرتے ہوئے دوکانوں کے تالے توڑ دیے اور قبضہ مافیا کی طرف سے صحافی کو مسلسل قتل کی دھمکیاں مل رہی ہیں صحافیوں کے تحفظ کے لیے تھانہ تھ شیخم میں درخواست دی جس کی ابھی تک کوئی کارروائی نہیں کی گئی جبکہ صحافی نے آئی جی پنجاب شکایت سیل نمبر 8787 پر بھی اطلاع دی تاحال کاروائی عمل میں نہ آئی صحافی نے ڈی پی او قصور آئی جی پنجاب سے انصاف کی اپیل کی ہے

Leave a reply