خامنہ ای پر پابندیاں احمقانہ فیصلہ، ڈپریشن کا شکار امریکہ بے سروپا اقدامات کر رہا ہے، حسن روحانی

ایرانی صدر حسن روحانی نے امریکہ کی طرف سے ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای اور وزیر خارجہ سمیت دیگر اعلیٰ فوجی عہدے داروں پر عائد کی گئی پابندیوں کو انتہائی احمقانہ فیصلہ قرار دیا ہے.

باغی ٹی وی کی رپورٹ‌ کے مطابق امریکی صدر ٹرمپ کی طرف سے ایک دن قبل نئی پابندیوں کے اعلان کے تناظر میں‌ ایرانی صدر حسن روحانی نے قوم سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ امریکہ ہماری برداشت کو بزدلی یا کمزوری خیال نہ کرے. ہم اپنی سرزمین کے دفاع کیلئے آخری حد تک جائیں گے.

سرکاری ٹی وی پر نشر کئے گئے خطاب میں‌ انہوں نے کہاکہ امریکہ ڈپریشن کا شکار ہو کر اس نوعیت کے بے سروپا اقدامات کر رہا ہے جو خود اس کیلئے سبکی کا باعث بن رہے ہیں. ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای کی ایران سے باہر کوئی جائیداد نہیں ہے اسلئے ان کے خلاف پابندیوں‌کو احمقانہ پن کے سوا اور کچھ نہیں‌ کہا جاسکتا.

واضح رہے کہ امریکی صدر ٹرمپ نے کل ایران کے خلاف نئی پابندیوں‌ کا اعلان کیا تھا اور کہا گیا تھا کہ ان پابندیوں میں ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای کو نشانہ بنایا گیا ہے. ادھر ایران کی طرف سے کہا گیا تھا کہ اگر امریکہ باز نہ آیا تو ایران مزید ڈرون گرانے کی بھی صلاحیت رکھتا ہے اور ہم ایسا کرنے سے باز نہیں‌ آئیں گے. حالیہ دنوں‌ میں ایران امریکہ کشیدگی عروج پر ہے اور دونوں‌ طرف سے سخت بیان بازی کی جارہی ہے.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.