خاتون کو شوہر کے سامنے برہنہ کر کے وحشیانہ تشدد کا انکشاف، ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی

بھارت میں ہندوانتہاپسند تنظیم بی جے پی اور نریندر مودی کے دوبارہ برسراقتدار آنے کے بعد سے ہجومی تشدد کے واقعات دن بدن بڑھتے جارہے ہیں. ہفتہ کے دن بھی ریاست بہار میں ایسا ہی خوفناک واقعہ پیش آیا ہے.

باغی ٹی وی کی رپورٹ‌ کے مطابق بہار کے حاجی پورہ علاقہ میں ایک خاتون پر چوری کا الزام لگا کر اسے اس کے شوہر کےسامنے بری طرح‌ تشدد کا نشانہ بنایا گیا ہے. اس دوران انتہاپسندوں نے خاتون کے کپڑے پھاڑ کر اسے برہنہ کر دیا اور گینگ ریپ کی دھمکی بھی دی، مذکورہ خاتون کے شوہر نے جب اپنی بیوی کو چھڑوانے کی کوشش کی تو اسے بھی زبردست تشدد کا نشانہ بنایا گیا،

بھارتی میڈیا کا کہنا ہے کہ علاقہ میں‌ موجود مندر سے کسی خاتون کی سونے کی چین چوری ہو گئی تو اس کا الزام مذکورہ خاتون پر لگایا گیا تو انتہاپسندوں نے پکڑ کر اسے مارنا شروع کر دیا، اس موقع پر وہاں‌ موجود ایک شخص نے ویڈیو بنالی جو سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی، مقامی لوگوں‌ کا کہنا ہے کہ انتہاپسند دو گھنٹے تک خاتون کو تشدد کا نشانہ بناتے رہے تاہم اس دوران کوئی پولیس افسر وہاں نہیں پہنچا. زخمی ہونےو الے دونوں‌میاں‌ بیوی کو ہسپتال داخل کروادیا گیا ہے اور خاتون کے پاس سے چین بھی نہیں ملی ہے. پولیس نے مقدمہ درج کر لیا ہے. مقامی لوگوں نے اس واقعہ کے خلاف سخت احتجاج کیا ہے.

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.