fbpx

خواجہ برادران کی عدالت پیشی، کس کو کمرہ عدالت سے باہر نکال دیا گیا؟

خواجہ برادران کی عدالت پیشی، کس کو کمرہ عدالت سے باہر نکال دیا گیا؟

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق پیراگون ہاوَسنگ اسکینڈل کیس کی احتساب عدالت میں سماعت ہونی ہے، خواجہ برادران کو احتساب عدالت پہنچا دیا گیا، اس موقع پرصحافیوں کو کمرہ عدالت سے نکال دیا گیا.

انچارج اینٹی رائٹ فورس نے کہا کہ کمرہ عدالت میں موجود تمام افراد کو بھی باہر نکال دیاجائے، صحافیوں نے خواجہ برادران سے بات کی تو افسران ناراض ہوں گے،افسران نے منع کر رکھا ہے کسی صحافی کو کمرہ عدالت میں نہ جانے دیاجائے،

صحافیوں کو کمرہ عدالت سے باہر نکالے جانے پر صحافیوں نے احتجاج بھی کیا مگر پولیس نے ایک نہ سنی، اس موقع پر خواجہ سعد رفیق بھی پولیس والوں کو کہتے رہے کہ صحافیوں کو باہرنہ نکالا جائے لیکن پولیس نہ مانی.

اس موقع پر سیکورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں، پولیس کی بھاری نفری تعینات ہے ،ن لیگی کارکنان کو بھی کمرہ عدالت میں داخلے کی اجازت نہیں دی گئی.

آپ نے بحث مکمل کرنی ہے یا باہر جانا ہے؟ عدالت کے استفسار پر خواجہ سعد رفیق نے کیا کہا؟

لاہور کی احتساب عدالت نے 4 ستمبر کو مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی خواجہ سعد رفیق اور ان کے بھائی خواجہ سلمان رفیق کے خلاف پیراگون ہاؤسنگ سوسائٹی میں بے ضابطگیوں پر دائر ریفرنس میں فرد جرم عائد کی تھی۔ خواجہ سعد رفیق اور خواجہ سلمان رفیق نے صحت جرم سے انکار کیا تھا۔

میں ملنے گئی تو زرداری وہیل چیئر سے اٹھے، پولیس نے کہا دفعہ ہو جاؤ، آصفہ بھٹو

آصف زرداری کا طبی معائنہ، کونسی بیماری اور ڈاکٹر نے کیا تجویز کیاِ؟

واضح رہے کہ 11 دسمبر کو لاہور ہائی کورٹ نے مسلم لیگ ن کے رہنماؤں خواجہ سعد رفیق اور ان کے بھائی سلمان رفیق کی عبوری ضمانت خارج کردی تھی، جس کے بعد نیب نے دونوں بھائیوں کو حراست میں لے لیا تھا۔ خواجہ برادران کو پیراگون ہاؤسنگ اسکینڈل میں گرفتار کیا گیا ہے