خیبر پی کے کا بلین ٹری سونامی دنیا میں پاکستان کی پہچان بن کر سامنے آیا ہے، ملک امین اسلم

وزیر اعظم کے مشیر برائے موسمیاتی تبدیلی ملک امین اسلم نے کہا ہے کہ خیبر پختونخواہ کا بلین ٹری سونامی عالمی سطح پر پاکستان کی پہچان بن کر سامنے آیا ہے جبکہ اقوام متحدہ اس منصوبے کو پوری دنیا کیلئے بطور مثال پیش کرنا چاہتی ہے۔ یہ منصوبہ 10 بلین ٹری سونامی کیلئے ایک لانچنگ پیڈ کی حیثیت رکھتاہے۔

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق انہوں نے کہاکہ پورے ملک میں 10ارب مزید درخت لگائے جائیں گے جن میں سے 5 ارب اگلے چار سالوں میں لگیں گے۔ اس ضمن میں منصوبہ سازی کر لی گئی ہے۔ پانچ ارب درختوں کے اس منصوبے میں صوبہ خیبر پختونخواہ مزید ڈیڑھ ارب درخت لگائے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے صحافیوں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ وزارت موسمیاتی تبدیلی نے محکمہ جنگلات خیبر پختونخواہ اور ریڈ پلس کے تعاون سے صحافیوں کیلئے ایک ارب درخت لگانے کے منصوبے کے مقام کے دورہ کا اہتمام کیا۔تین روزہ دورہ میں پرنٹ اور الیکٹرانک میڈیا سے سینئر صحافیوں نے شرکت کی۔ دورہ کے اختتام پر صحافیوں نے وزیر اعظم کے مشیر سے انکے دفتر میں ملاقات کی اور اپنی آراء سے آگاہ کیا۔ صحافیوں نے اس پروگرام کی تعریف کی اور حکومتی کاوشوں کو سراہا۔

ملک امین اسلم نے اس امر کا بھی عہد کیا کہ وہ وسیع تر ملکی مفاد میں تنقید برائے تنقید کی بجائے تنقید برائے تعمیر کریں گے تا کہ حکومت وقت زمینی حقائق سے آگاہ رہے۔ وفاقی وزیر نے صحافیوں کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ ذرائع ابلاغ حکومت اور عوام کے درمیان پل کا کردار ادا کرتے ہیں اس لیے تنقید برائے تعمیر بہت ضروری ہے۔ مزید براں ملکی ترقی میں میڈیا کا کردار نہ صرف اہم بلکہ نا گزیر ہے۔ ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کی نشاندہی پر وفاقی وزیر نے کہا کہ جن لوگوں نے جنگلات کی چوری کی روک تھام یا آگ لگنے کے واقعات میں اپنی جانیں دیں ہیں وہ قومی ہیرو ہیں۔ حکومت ایسے جانثاروں کو مالی امداد دے گی۔ وزارت اپنے بجٹ سے آگ بجھانے کے آلات خریدنے کا ارادہ بھی رکھتی ہے تاکہ جنگلات کے خزانے کو آگ سے محفوظ رکھا جا سکے۔

وفاقی وزیر نے مزید کہا کہ جن لوگوں نے جنگلات کاری میں مزدوری کی ہے حکومت ان کو ایک ایک پیسے کی ادائیگی یقینی بنائے گی۔ مشیر برائے موسمیاتی تبدیلی نے مزید کہا کہ اقوام متحدہ پاکستان کے اس منصوبے کو نہ صرف سراہ رہا ہے بلکہ دیگر ملکوں کو بھی پاکستان کی مثال سے ترغیب دے رہا ہے تاکہ کلائمیٹ چینج کا مقابلہ کیا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ یہ پاکستان کی تاریخ کا واحد منصوبہ ہے جس کی غیر جانبدار مانیٹرنگ کرائی گئی اور اس کو عالمی سطح پر تسلیم کیا گیا ہے۔ وفاقی وزیر 10 بلین ٹری سونامی کے منصوبے کے مندرجات سے بروز جمعرات ایک پریس کانفرنس کے ذریعے آگاہ کریں گے۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.