fbpx

خوش قسمت ہوں میرے خاندان نے جہیز کی بجائے میری تعلیم پر خرچ کیا کومل عزیز خان

پاکستان کی نوجوان ابھرتی ہوئی خوبرو اداکارہ کومل عزیز کا کہنا ہے کہ خوش قسمت ہوں میرے خاندان نے جہیز کی بجائے میری تعلیم پر خرچ کیا-

باغی ٹی وی : اداکارہ نے انسٹاگرام پر لائیو سیشن رکھا جس میں اداکارہ نے جہاں مداحوں کے سوالوں کے جواب دلچسپ جواب دیئے وہیں انہیں زندگی میں آگے بڑنے اور کرئیر بنانے کے حوالے سے بھی قیمتی مشوروں سے نوازا-

کومل عزیز خان نے کیریئر بنانے کے حوالے سے تجویز مانگنے پر نوجوانوں کو مشورہ دیا کہ اگر ان کے پاس پیسے ہیں تو وہ بیرون ملک سے تعلیم حاصل کریں اور اگر ان کے پاس پیسے کی کمی ہے تو وہ ملکی یونیورسٹیز سے بہتر تعلیم حاصل کریں اور کوشش کرکے بہت زیادہ انٹرن شپس حاصل کرکے تجربہ حاصل کریں اور کتابیں پڑھنے کی کوشش کریں-

کومل عزیز خان نے ایک سوال کے جواب میں نوجوان لڑکیوں کو مشورہ دیا کہ انہیں تعلیم اور تربیت حاصل کرنے کے بعد پہلے مالی طور پر خود مختار ہونا چاہیے، جس کے بعد وہ اپنی جسمانی اور ذہنی صحت کا بھی خیال رکھیں۔

اداکارہ نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ جب وہ 15 برس کی تھیں تب سے ہی انہوں نے کاروبار کی تربیت لینا شروع کی تھی اور محض 18 سال کی عمر میں انہوں نے سونے میں سرمایہ کاری کرنا شروع کی۔

اداکارہ نے بتایا کہ انہوں نے پاکستان سمیت امریکا سے بھی بزنس کی تعلیم حاصل کی اور بزنس پر لکھی بہت ساری کتابیں بھی پڑھیں اور کاروبار کرنا ان کا سب سے بڑا جذبہ ہے۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے بتایا کہ انہوں نے بزنس و اکنامکس میں بیچلر کیا ہے جب کہ ان کی بہن ڈاکٹر ہیں اور وہ خوش قسمت ہیں کہ ان کے خاندان نے ان کے جہیز کے بجائے ان کی تعلیم پر خرچ کیا۔

واضح رہے کہ اسی سیشن میں اداکارہ کا کہنا تھا کہ وہ کسی پاکستانی اداکار سے متاثر نہیں ہیں بلکہ انسانیت کی خدمت کرنے والی شخصیات سے متاثر ہیں، جو دکھاوے کے بغیر فلاحی کام کرتے ہیں ان کا کہنا تھا کہ انہوں نے زندگی میں بہت ساری مشکلات کا سامنا کیا، کیوں کہ وہ والد کے جلد فوت ہوجانے اور بغیر بھائی کے پدرشانہ نظام میں پلی بڑھیں ہیں-

خیال رہے کہ کومل عزیز خان ’عشق بے نام، بساط دل، بھروسہ پیار تیرا، راز الفت اور سہیلیاں جیسے ڈراموں میں کام کر چکی ہیں-

کسی پاکستانی اداکار سے متاثر نہیں ہوں کومل عزیز خان