fbpx

چین: خشک سالی کے شکار دریا سے 6 سو سال پرانے مجمسے برآمد

چونگ کنگ میں 34 کاؤنٹیوں کے 66 دریا سوکھ گئے ہیں۔

چین میں خشک سالی کے باعث دریائے یانگزی میں پانی کی سطح کم ہونے کے باعث 6 سو سال پرانے مجمسے برآمد ہوئے ہیں۔

باغی ٹی وی : غیر ملکی میڈیا کے مطابق چین میں جنوب مغربی شہر چونگ چنگ کے قریب خشک سالی کے شکار دریائے یانگزی میں ظاہر ہونے والے ایک جزیرے پر موجود ایک بڑے پتھرپر بنےتین مجسمے برآمد ہوئے ہیں-

سخت گرمی: جاپانی عوام پالتو جانوروں کو پنکھوں والے لباس پہنانے لگے

رپورٹ کے مطابق ان تین مجسموں میں مرکزمیں گوتم بدھ کا مجسمہ جبکہ دونوں اطراف میں موجود مجسمے بدھ بھکشو خیال کیے جاتے ہیں۔

یہ تینوں مجسمے فوئیلیانگ نامی جزیرے کی چٹان کے سب سے اونچے حصے پر پائے گئےماہرین کا خیال ہے کہ یانگزی سے دریافت ہونے والے یہ مجسمے 600 سال قبل منگ اور چنگ خاندانوں کے دور حکمرانی کے دوران بنائے گئے ہوں گے۔

سرکاری پیشین گوئیوں کے مطابق، یانگزیطاس میں جولائی سے اب تک معمول سے تقریباً 45 فیصد کم بارش ہوئی ہے، اور زیادہ درجہ حرارت کم از کم ایک اور ہفتے تک برقرار رہنے کا امکان ہے چونگ کنگ میں 34 کاؤنٹیوں کے 66 دریا سوکھ گئے ہیں۔

خیال رہے کہ رواں برس یورپ میں بھی خشک سالی، سخت گرمی اور بارشوں کی کمی کے باعث یورپ کے دریاؤں میں بھی سطح آب میں کمی آنے کے بعد کافی نایاب اور قدیم چیزیں ظاہر ہوئی ہیں۔

اسپین میں ماہرین آثارقدیمہ نے ایک قبل ازتاریخ دورکا پھترسے بنا ہوا سرکل دریافت کیا تھا جسے "Spanish Stonehenge” کا نام دیا گیا جبکہ یورپ کےدریائےڈینیوب میں خشک سالی کےبعد مختلف مقامات سے دوسری جنگ عظیم کے دوران تباہ ہونے والے جرمنی کے 20 بحری جنگی جہاز بھی دریافت ہوئے ہیں۔

اٹلی : خشک ہونے والے دریا سے دوسری جنگ عظیم کا بم برآمد

جبکہ حال ہی میں اٹلی میں قحط سالی سے خشک ہونے والے دریا سے دوسری جنگ عظیم کا بم برآمد ہوا تھا بی بی سی کے مطابق 450 کلوگرام (1,000lb) کا یہ بم 26 جولائی کو اٹلی کے شمال میں ایک گاؤں بورگو ورگیلو کے قریب ماہی گیروں کو دریائے پو کے کنارے سے ملا تھا اٹلی کی 70 سال کی بدترین خشک سالی میں 650 کلومیٹر (400 میل) دریا کے بڑے حصے سوکھ گئے ہیں۔

فوج کے اہلکار کرنل مارکو ناسی نے خبر رساں ادارے روئٹرز کو بتایا تھا کہ یہ بم ماہی گیروں کو پو دریا کے کنارے سے ملا تھا کیا کیونکہ قحط سالی کے باعث دریا میں پانی کی سطح میں نمایاں کمی آئی ہے فوجی ماہرین نے اس بم کو وہاں سے منتقل کرکے ایک جگہ کنٹرول دھماکا کیا –

اس بم کو ڈی فیوز کرکے کنٹرول دھماکا کرنا آسان کام نہیں تھا بم کو دوسری جگہ پہنچانے سے قبل وہاں اردگرد کی آبادیوں سے 3 ہزار افراد کو محفوظ مقامات پر منتقل کیا گیا، فضائی حدود کو بند کردیا گیا جبکہ ریلوے لائن اور شاہراؤں کو بھی بند کیا گیا۔