fbpx

خواتین کو محرم کے بغیر حج کیلئے رجسٹریشن کی اجازت

خواتین کو محرم کے بغیر حج کیلئے رجسٹریشن کی اجازت

سعودی عرب کا احسن اقدام، خواتین کو محرم کے بغیر حج کے لیے رجسٹریشن کی اجازت مل گئی۔ سعودی وزارت حج نے خواتین کو محرم کے بغیر حج کے لیے اندراج کی اجازت دی ہے، خواتین کے لیے محرم کو ترجیحی شرط سے خارج کردیا گیا ہے۔ سعودی عرب کی وزارت حج وعمرہ نے سال 1444ھ کے لیے حج ادا کرنے کے خواہش مند افراد کے لیے ”نسک“ ایپلی کیشن کے ذریعے اندرون مملکت عازمین کے لیے جلد رجسٹریشن کھولنے کا اعلان کیا ہے۔

اس سال حج کرنے کے لیے رجسٹریشن کے لیے کم از کم عمر 12 سال ہو گی، جن لوگوں نے پہلے حج نہیں کیا ان کو رجسٹریشن کے لیے ترجیح دی جائے گی۔ ساتھ ہی شہریوں کے لیے ”قومی شناخت“ یا ”مقامی شناخت“ کی موجودگی ضروری ہے۔ سعودی وزارت حج وعمرہ نے وزارت کی ویب سائٹ اور ”نسک“ ایپلی کیشن کے ذریعے اندرون ملک سے آنے والے عازمین کی جلد رجسٹریشن کی دستیابی کا اعلان کیا ہے۔

مزید یہ بھی پڑھیں؛
ہم بچے نہیں ہیں جو ہم پر ہونے والے حملوں کو نہ سمجھ پائیں اسد صدیقی کا عادل راجہ کو منہ توڑ جواب
اسلام آباد میں آج موسم شدید سرد اور خشک رہے گا
فیصل واوڈ کی نشست پر انتخاب کامعاملہ،کاغذات نامزدگی آج سے 7 جنوری تک جمع ہوں گے
اداکاراؤں کی کرداکشی : خواتین کی عزت نہ کرنے والے ذہنی بیمار ہیں،مریم اورنگزیب
یاد رہے کہ اس سے قبل غیر ملکی خبر رساں ایجنسی ’اے ایف پی‘ کے مطابق سعودی سرکاری میڈیا کی رپورٹ میں شاہی فرمان کے حوالے سے کہا گیا تھا کہ ’شاہی فرمان کے تحت خواتین کو بھی مردوں کی طرح ڈرائیونگ لائسنسز کے اجرا کیا جائے گا اور دیگر ٹریفک قوانین لاگو کیے جائیں گے۔‘ واضح رہے کہ سعودی عرب میں مرحوم شاہ عبداللہ کے دور حکومت میں خواتین کو بااختیار بنانے کے عمل کا آغاز ہوا تھا اور شاہ عبداللہ نے 2013 میں خواتین کو شوریٰ کونسل میں شامل کرنے کی اجازت دی تھی۔