fbpx

کون سی ویکسین کی ایک ہی ڈوز کافی ، نئی تحقیق آگئی

باغی ٹی وی : کون سی ویکسین کی ایک ہی ڈوز کافی ، نئی تحقیق آگئی
کورونا مریضوں کے لیے ویکسین کی زیادہ ڈوزیں دینے کی اب ضرورت نہیں رہی . اس حوالے سے امریکی سائنسدانوں نے دعویٰ کیا ہے کہ فائزر اور موڈرنا ویکسین کی ایک  ہی ڈوز کافی ہے لیکن یہ صحت مند افراد کے لیے کفایت کرے گی .

امریکا کے مہرے میڈیکل کالج کےسربراہ اور  فوڈ اینڈ ڈرگ ایڈمنسٹریشن ایڈوائزری کمیٹی میں خدمات سرانجام دینے والے ڈاکٹر جیمز ہلڈریتھ کا کہنا ہے کہ ایک تحقیق کے مطابق  وہ لوگ جوپہلے ہی کورونا سےصحتیاب ہو چکےہیں ان کے لیے فائزر اور موڈرنا ویکسین کی ایک ہی ڈوز کافی ہے۔

ڈاکٹر جیمز ہلڈریتھ کے مطابق یہ ایک ڈوز  بھی ایسے افراد میں آئندہ کے لیے بہتر قوت مدافعت پیدا کر دیتی ہے اس لیے انہیں دوسری ڈوز دینا ویکسین کو ضائع کرنےکے برابر ہے۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ کیونکہ کروڑوں افراد کورونا سے ازخود صحتیاب ہو چکے لہٰذا انہیں 2 ڈوز لگوانے سے بہتر ہے کہ ویکسین انہیں دی جائےجو اس کے زیادہ مستحق ہیں

کرونا ویکسین کا راز ہیکرز کی جانب سے چوری کرنے کی کوشش ناکام

کرونا پھیلاؤ روکنے کے لئے این سی او سی کا عوام سے مدد لینے کا فیصلہ

چین سے پاکستان لائی جانے والی کرونا ویکسین لگوانے کے بعد بھی طبی عملہ کرونا کا شکار ہو نے لگا

‏ سوشل میڈیا پر وزیر اعظم کے خلاف غصے کا اظہار کرنے پر بزرگ شہری گرفتار

کرونا میں مرد کو ہمبستری سے روکنا گناہ یا ثواب

ادھر ویکسین لینے کے بعد ری ایکش سے اموات ہوئی ہیں . ا برطانوی میڈیسن اینڈ ہیلتھ کیئر پروڈکٹس ریگولیٹری ایجنسی کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ ایسٹرا زینیکا کی ویکسین لینے کے بعد 30 افراد میں خون جمنے کی شکایت سامنے آئی تھی۔ جس میں سے سات ہلاک ہو گئے ہیں۔

دوسری طرف برطانوی اخبار گارڈین کے مطابق ہیماٹالوجی پینل کے ماہرین کا کہنا ہے کہ ویکسین کے فوائد اس کے نقصانات سے کہیں زیادہ ہیں۔

ایم ایچ آر اے کی چیف ایگزیکٹو ڈاکٹر جون رینے کا کہنا ہے کہ ایجنسی رپورٹس کا تفصیل سے جائزہ لے رہی ہے، لیکن ویکسین لگانے کا عمل جاری رہے گا

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.