fbpx

لاہور:گرلز کالج سے22سالہ طالبہ اغوا:مقدمہ درج مگرکس کے خلاف؟

لاہور:گرلز کالج سے 22 سالہ طالبہ اغوا:مقدمہ درج مگرکس کے خلاف؟،اطلاعات کے مطابق لاہور میں سمن آباد گرلز کالج سے 22 سالہ طالبہ مبینہ طور پر اغوا ہوگئی۔

اطلاعات ہیں‌ کہ پولیس کا کہنا ہے کہ طالبہ سیکنڈ ائیر کے امتحانات دینےآئی تھی، لڑکی کالج میں داخل ہوئی لیکن واپسی پرگھر نہیں پہنچی۔
پولیس کا کہنا تھاکہ لڑکی کے اغوا کا مقدمہ بھائی فیاض کی مدعیت میں تھانہ ملت پارک میں درج کرلیا گیا ہے۔

مقدمے کے متن کے مطابق لڑکی کا فون نمبر بند ہے، کسی نا معلوم نے اغوا کر لیا ہے۔اُدھر کالج انتظامیہ کا کہنا ہے کہ لڑکی کالج آئی اور واپسی رش میں نکلی ہے۔

دوسری جانب وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے سمن آبادگرلزکالج کی طالبہ کے مبینہ اغوا کا نوٹس لے لیا۔ترجمان نے بتایا کہ وزیراعلیٰ نے سی سی پی او سے رپورٹ طلب کرتے ہوئے طالبہ کو جلد بازیاب کرانے کی ہدایت کی ہے۔

ادھرتھانہ نشتر کی حدود میں افسوسناک واقعہ پیش آیا جہاں 22سالہ لڑکی کا مبینہ طور پر گلا تیز دھار آلہ سے کاٹ کر قتل کر دیا گیا۔ 22 سالہ صاحبزادی کو نامعلوم افراد نے قتل کے بعد لاش کو آشیانہ ہاؤسنگ سکیم کے کھیتوں میں پھینک دیا۔ پولیس نے موقع سے لاش کو فرانزک کے بعد مردہ خانہ منتقل کردیا۔

22سالہ صاحبزادی شادی شدہ اور خاوند کا نام نعیم بتایا جا رہا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ لاش 12 گھنٹے سے زائد پرانی لگ رہی ہے جبکہ جسم پر تشدد کے نشانات اور گلہ تیز دھار الے سے کا ٹا گیا ہے۔

دوسری جانب سی سی پی او فیاض احمد دیو نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے ایس پی ماڈل ٹاؤن سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔سی سی پی او نے واقعہ میں ملوث ملزمان کی فوری گرفتاری کی ہدایت بھی ہے۔ ترجمان لاہور پولیس کا کہنا ہے کہ خاتون کے بھائی کے مطابق مقتولہ کےشوہر نے اپنی بیوی کو تشدد کرکے مارا ہے۔

مقتولہ کے بھائی کے بیان پر شوہر نعیم کو شامل تفتیش کر لیا گیا ہے۔ ایس پی ماڈل ٹاؤن کا کہنا تھا کہ مزید تفتیش جاری ہے، شواہد اور حقائق کی روشنی میں جلد ملزمان کو گرفتار کر لیں گے۔