سموگ کا تدارک، جوہر ٹاون سے اللہ ہو چوک تک تمام کیفے سیل کرنے کا حکم

عدالتی حکم پر عمل نہیں،صرف وزیراعلیٰ کا حکم مانا جاتا ہے،عدالت کے ریمارکس
0
102
smog04

لاہور ہائیکورٹ: سموگ کے تدراک کے حوالے سے کیس کی سماعت ہوئی

عدالت نے درخواستوں پر سماعت,چار دسمبر تک ملتوی کر دی ،عدالت نے گرین بیلٹ پر رکاوٹیں ہٹانے کا حکم دے دیا،عدالت نے گرین بیلٹ پر کھڑی گاڑیوں کو جرمانے کرنے کا حکم دے دیا ،عدالت نے ریلیف کمشنر کے نوٹیفکیشن پر عدم اطمینان کر دیا،عدالت نے کہا کہ واٹر کمیشن خود ریلیف کمشنر سے مل کر ازسر نو نوٹیفکیشن جاری کرائے،عدالت میں وکلا نے ایل ڈی اے 24کنال پر بنائے گیے سپورٹس کمپلیکس کی نشاندہی کی گئی ،عدالت نے اس کمپلیکس کو آپریشنل کرنے کے لیے ایل ڈی اے کے وکیل کو ہدایات جاری کر دیں ،عدالت نے کہا کہ اس نوٹیفکیشن میں سقم ہے ،عدالت نے جوہر ٹاون سے اللہ ہو چوک تک تمام کیفے سیل کرنے کا حکم دے دیا۔عدالت نے کیفوں کو ٹیک وے کی اجازت دے دی ،عدالت نے حکم دیا کہ میرے آرڈر تک ان کیفوں کو ڈی سیل نہ کیا جائے،پولیس اور ادارے عدالت کے آرڈر پر عمل درآمد نہیں کرتے،صرف وزیر اعلی کے حکم پر عمل درآمد ہورہا ہے۔

میاں عرفان اکرم ایڈوکیٹ نے کہا کہ اے سی ماڈل ٹاون فی کیفے ایک لاکھ لیتا ہے ۔عدالت نے اپنے نوٹیفکیشن پر عمل درآمد کا حکم دے دیا ،عدالت نے ریلیف کمشنر کی طرف سے ہفتہ کو دفاتر تین بجے کھولنے پر افسوس کا اظہار کیا، عدالت نے کہا کہ ریلیف کمشنر کو سموگ نظر نہیں آتی، عدالت نے حکومتی نوٹیفیکیشن پر واٹر کمیشن کو کسی قسم کی مداخلت کرنے سے روک دیا،عدالت نے کہا کہ حکومت نے کاروبار اوردفاتر کا جو نوٹیفیکیشن جاری کیا ہے واٹر کمیشن مداخلت نہ کرے،

عدالت نےدھواں چھوڑنے والے بھٹہ اور فیکٹریوں کو دوبارہ سیل کرنے کا حکم دیا،واٹر کمیشن نے کہا کہ اگر حکومت دھواں اور بھٹے کنٹرول کر لیں تو سموگ کا خاتمہ ہو سکتا ہے،ڈی جی پلاننگ نے کہا کہ ڈھاکہ سے لے کر انڈیا تک پالوشن سات سو گنا زیادہ ہے ،عدالت نے کہا کہ ضرورت اس امر کی ہے کہ آپ عدالت کے فیصلوں پر عمل درآمد کرائیں، ہمیں سموگ دور سے نظرآتی ہے مگر ماحولیات کے افسروں کو کیوں نظر نہیں آتی، واٹر کمیشن نے کہا کہ ملتان میں بیشتر بھٹہ دھواں چھوڑتے ہیں ،عدالت نے کہا کہ آپ تسلیم کریں کہ سموگ ہے ،سڑکوں پر لگایا گیا پیسہ اگر سموگ پر لگایا جاتا تو اج سموگ نہ ہوتی.

سموگ ، جمعہ اور ہفتہ کو تعلیمی ادارے بند کرنے کا اعلان 

سائیکل کرائے پر دینے کے لیے مختلف پوائنٹ بنانے کے لیے اسیکم بنائی جائے

آلودگی پھیلانے والی فیکٹروں کو سیل کرنے کا حکم

 ہفتے میں 2روز گھر سے کام کرنے کی پالیسی پر عمل کرائیں

گھروں میں گاڑیاں دھونے والوں کے خلاف بھی کارروائی یقینی بنائی جائے

Leave a reply