fbpx

لاہور ہائیکورٹ میں اہم شخصیات نے ملکر معافی مانگ لی

لاہور ہائیکورٹ میں اہم شخصیات نے ملکر معافی مانگ لی

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق سول جج سرگودھا اوراسسٹنٹ کمشنر سرگودھا کےدرمیان تنازعہ ،عدالت نے پی ایم ایس ایسوسی ایشن کی متفرق درخواست پر سماعت 13 اپریل تک ملتوی کردی

اسسٹنٹ کمشنر ساہیوال سمیت پنجاب کی پی ایم ایس ایسوسی ایشن نے عدالت سے معافی مانگ لی جس پر لاہور ہائیکورٹ کے چیف جسٹس محمد قاسم خان نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ ایسوسی ایشن صدر اور ساہیوال کے اسسٹنٹ کمشنر معافی لکھ کے دیں، عدالت نے کمرہ عدالت مین موجود اسسٹنٹ کمشنر کو غیر مشروط معافی داخل کرنے کی ہدایت کردی ،عدالت نے کہا کہ سسٹم مین خرابیاں ہیں. گزشتہ سماعت پر ڈائریکٹر ایف آئی اے نے بتایا کہ ہڑتال کرنے والے 49 بیوروکریٹس کی نشاندہی ہو گئی ہے۔ چیف جسٹس نےق رار دیا تھا کہ اسسٹنٹ کمشنرکو حکومت نے عدلیہ کے خلاف بیان بازی پر ایوارڈ دیا ،عدالت نے وفاقی سیکرٹری داخلہ. سکریٹری کمیونیکشن اینڈ ورکس کو طلب کر رکھا ہے عدالت نے چیرمین پیمرا. ڈائریکٹر ایف آئی اے اور ڈائریکٹر ایف آئی اے سائبر کرائم عبدالرب کو طلب کر رکھا ہے

عدالت نے سول جج سے جھگڑا کرنے والے اسسٹنٹ کمشنر کو توہین عدالت کے نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب داخل کروانے کی ہدایت کر رکھی ہے چیف جسٹس نے اسسٹنٹ کمشنر پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے قرار دیا تھا کہ تم اسسٹنٹ کمشنر کی پوسٹ پر رہنے کے اہل نہیں ہو۔گزشتہ سماعت پر ایف آئی اے نے اپنی رپورٹ میں عدالت کا اگاہ کیا تھا کہ ہڑتال کی کال دینے والے بیوروکریٹ عظیم شوکت اعوان کا موبائل فرنزک کے لیے بھجوا دیا گیا ہے عدالت نے ایف آئی اے سے پاکستان بھر کے چینلز پر عدلیہ کے بارے ریمارکس اورا پروگراموں کی تحقیقات کرکے رپورٹ طلب کر رکھی ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.