fbpx

معاشی اعدادوشمار کے معروف ماہرڈاکٹرفرخ سلیم نے اپنی توپوں کا رخ عمراں خان کی طرف کردیا

لاہور:معاشی اعدادوشمار کے معروف ماہرڈاکٹرفرخ سلیم نے اپنی توپوں کا رخ عمراں خان کی طرف کردیا،اطلاعات کے مطابق معاشی اعدادوشمارکے معروف ماہر ڈاکٹرفرخ سلیم نے اپنی توپوں کا رخ‌عمران خان کی طرف پھیرتے ہوئے بڑے دعوے کردیئے ہیں‌

باغی ٹی وی کے مطابق ڈاکٹرفرخ سلیم جو کہ پچھلے کئی ماہ سے عمران خان کی شخصیت پرتابڑتوڑحملے کررہے ہیں‌ تودوسری طرف اپنے اعدادوشمار کے ذریعے عمران خان کے مخالفین کو کمک بھی فراہم کررہے ہیں

 

 

ڈاکٹرفرخ سلیم چونکہ پہلے ہی معاشی ماہرین کی نظرمیں اعدادوشمارکوحالات کے مطابق ایڈجسٹ کرنے میں فن رکھتے ہیں اب پھرایک ایسا دعویٰ کردیا ہے کہ جس کو سن کرجہاں عمران خان کے مخالفین کو موقع ملا ہے وہاں پڑھےلکھے طبقے کوڈاکٹرفرخ سلیم کی جدوجہد پرشک گزرا ہے

ڈاکٹرفرخ سلیم کہتےہیں کہ عمران خان کے 56 فیصد سے زائد ٹویٹرفالوورز فیک ہیں ، اوروہ اس بنیاد پرکہتےہیں کہ چونکی فالوورز فیک ہیں لٰۃذا عمران خان کا گراف نیچے آنا چاہیے

اپنی دوسری ریسرچ میں وہ کہتے ہیں کہ جب پاکستان بنا تھا تو اس وقت ڈالر کی قدرپاکستانی روپے کے مقابلے میں صرف تین درجے تک تھی جواج بڑھ کرایک سو65 تک جاپہنچی ہے

 

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ پی پی کے دور میں ڈالرکا اتنا ریٹ نہیں تھااور مہنگائی بھی کم تھی اورایسے ہی ن لیگ کے دور میں ہوا لیکن ڈاکٹرفرخ سلیم شاید یہ بتانا بھول گئے ہیں کہ جب پاکستان بنا تھا تو بڑے بڑے افسران کی تنخواہیں کبھی ہزاروں میں نہیں ہوتی تھیں کسی بڑے سے بڑے افسر کی تنخواہ شاید سو ڈیڑھ سو تک جواب لاکھوں میں ہوتی ہے

ڈاکٹرفرخ سلیم کا یہ بھی کہنا ہےکہ نصاب تعلیم میں بڑی تبدیلیاں کی گئی ہیں اوراسلامی کلچر اورمواد نکال کرغیراسلامی ڈال دیاہے

ڈاکٹرفرخ سلیم نے پچھلی حکومتوں‌کی طرف سے جو نصاب میں شامل کیا گیا تھا اس کے متعلق نہیں بتایا لیکن موجودہ حکومت کواس سارے نقصان کا ذمہ دار قرار دیا جارہا ہے

 

ڈاکٹرفرخ سلیم کے اخذ کردہ اعدادوشمار کواس وقت ن لیگ عمران خان کے خلاف ایک ٹرینڈ کے طور پرپیش کررہی ہے

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!