fbpx

لیڈنگ پبلک سیکٹر جامعات کا معیار تعلیم گر رہا ہے،قائمہ کمیٹی میں انکشاف

لیڈنگ پبلک سیکٹر جامعات کا معیار تعلیم گر رہا ہے،قائمہ کمیٹی میں انکشاف

سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے وفاقی تعلیم و فنی تربیت نے ہائرایجوکیشن کمیشن کی طرف ٹیکنالوجسٹ و انجینئرز کے سروس سٹریکچر اور ایکٹ کی تیاری میں تاخیری حربے اپنانے کے عمل پر شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے ہائر ایجوکیشن کمیشن کو فنڈز پرووائیڈنگ ایجنسی کے کردار سے نکل کر شعبہ اعلیٰ تعلیم میں نکھار لانے کیلئے پرو ایکٹو روول ادا کرنے کی ہدایت کی ہے

، کمیٹیٰ نے اس موقع پر ملک بھر کی پبلک سیکٹر جامعات کے اسکالرز کی طرف سے لکھے جانے والے ریسرچ جنرلز کوجانچنے کیلئے تین رکنی سب کمیٹی بھی تشکیل دی جو تمام پبلک سیکٹر جامعات کے جاری کردہ ریسرچ جنرلز بابت رپورٹ مرتب کرے گی۔

کمیٹی کااجلاس چیئرمین کمیٹی سینیٹر عرفان صدیقی کی زیر صدارت پارلیمنٹ ہاﺅس میں منعقد ہوا ۔دوران اجلاس ہائر ایجوکیشن کمیشن حکام نے کمیٹی کو بتاےا کہ کمیشن کے کوالٹٰی انہانسمنٹ سیل کی طرف سے ملک بھر کی پبلک سیکٹر جامعات کے تازہ ترین کئے گئے موازنے میں یہ بات سامنے آئی ہے کہ ملک کی لیڈنگ پبلک سیکٹر جامعات کا معیار تعلیم گر رہا ہے ۔کمیشن نے اپنی رپورٹ میں بتایا کہ مالی سال 2018-19 کے حاصل کردہ ریکارڈ کے مطابق ملک بھر کی 119 پبلک سیکٹر جامعات میں 32 لیڈنگ جامعات کا معیار تعلیم کم ہوا ہے ۔معیار تعلیم کی گرانی کا شکار جامعات میں جامعہ کراچی، قائداعظم یونورسٹی سمیت دیگر شامل ہیں ۔کمیشن نے اپنی رپورٹ میں یہ بھی بتاےا کہ ملک بھر کی کل 119 پبلک سیکٹر جامعات میں سے 18جامعات نے کمیشن کے مطالبہ پر مطلوبہ ریکارڈ ہی فراہم نہیں کیا۔

کمیٹی کی سنگل نیشنل کریکولم پر اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے ٹیکسٹ بک پبلشرز ایسوسی ایشن کے صدر فواذ نیاز نے بتایا کہ سنگل نیشنل کریکولم جس پر ابھی تک مکمل طور پر عمل درآمد بھی مکمل نہیں ہوا اب اس کو تبدیل کرنے کی باتیں کی جا رہی ہیں ۔پہلے بتاےا گیاتھا کہ نصاب کا نیا تیار کردہ ماڈل آخری درجہ معیار پر پورا اترے گا لیکن اب کہا جا رہا ہے کہ مذکورہ نیا تیار شدہ نصاب کم سے کم معیار جانچنے کیلئے ہے ۔پرائیویٹ پبلشر جو کہ حکومتی ماڈل کو لیکر اپنا نصاب پبلش کرتے ہیں انہیں مذکورہ نصاب کی پرنٹنگ کیلئے تمام اکائیوں سے علیحدہ علیحدہ این او سی لینا پڑ رہا ہے ۔اگر نصاب ایک کر دیا گیا ہے تو اس کی مانیٹرنگ باڈی تاحال ایک کیوں نہیں بن سکی ۔

کرونا ویکسین کے ذریعے ہمارے جسم میں بندر کا ڈی این اے ڈالا جائے گا،شہری عدالت پہنچ گیا

عالمی ادارہ صحت کی پاکستان کو کرونا ویکسین بارے بڑی یقین دہانی

کرونا ویکسین کا راز ہیکرز کی جانب سے چوری کرنے کی کوشش ناکام

کرونا پھیلاؤ روکنے کے لئے این سی او سی کا عوام سے مدد لینے کا فیصلہ

کرونا وائرس ، معاون خصوصی برائے صحت نے ہسپتال سربراہان کو دیں اہم ہدایات

ڈالر نے بھی تاریخ رقم کر دی

سوشل میڈیا پر وزیر اعظم کے خلاف غصے کا اظہار کرنے پر بزرگ شہری گرفتار

کورونا ویکسین لگنے سے 500 کے قریب بھارتیوں کی حالت بگڑ گئی

پرائیویٹ ایجوکیشن ریگولیٹری اتھارٹی کی چیئرپرسن ضیاءبتول نے کمیٹی شرکاءکو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ وہ اس وقت فقط 33 نفوس کی ٹیم سے وفاق بھر کے پرائیویٹ سیکٹڑ کو رجسٹرڈ و ریگولیٹ کرنے کی زمہ داری نبھا رہی ہیں ۔پیرا نے نئے پرائیویٹ تعلیمی اداروں کو رجسٹریشن جاریکرنے کی معیاد 90دن مقرر کر دی ہے پہلے نئی رجسٹریشنز کے کیسزز دس دس سال تک التوا کا شکار رہتے تھے۔پیرا نے پرائیویٹ سکول مالکان اور والدین کی شکایات کے ازالے کیلئے تحفظات سیل کو قیام عمل میں لایا ہے۔

کمیٹی اجلاس میں اراکین کمیٹی سینیٹر مہر تاج روغانی ،اعجاز احمد چوہدری،فوزیہ ارشد،فلک ناز،جام مہتاب حسین داہڑ،رانا مقبول احمد،مشتاق حمد خان اور مولوی فیاض محمد کے علاوہ پارلیمانی سیکرٹری ایجوکیشن وجیہہ قمر،سیکرٹری ایجوکیشن ،ایڈیشنل سیکرٹری ایجوکیشن،ای ڈی ایچ ای سی ،ایڈوائزر ایچ اسی، وائس چانسلر نیشنل ٹیکنیکل یونیورسٹی، چیئر پرسن نیشنل ٹیکنا لوجسٹ کونسل،اور ایس این سی حکام نے شرکت کی ۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!