fbpx

وزیراعظم کیخلاف نعروں پر سعودی عرب میں قانونی کاروائی شروع

لاہور:وزیراعظم کیخلاف نعروں پر سعودی عرب میں قانونی کاروائی شروع،اطلاعات کے مطابق الجزیرہ ٹی وی نے دعویٰ کیا ہے کہ سعودی عرب میں ہونے والے ایک واقعہ کی وجہ سے سعودی حکومت نے ان لوگوں کے خلاف کارروائی شروع کردی ہے جنہوں نے وزیراعظم پاکستان شہبازشریف کے خلاف چور چورآیا کے نعرے لگائے

اس حوالے سے معلوم ہوا ہے کہ کچھ سخت سزاوں کے ساتھ ساتھ بھاری جرمانے بھی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ، تاہم ابھی تک کتنے لوگ گرفتار ہوئے ہیں اس حوالے سے ابھی کوئی اطلاع نہیں ہے ، یہ بھی معلوم ہوا ہے کہ 60 ہزار ریال تک جرمانے اور پانچ سال کی قید بھی ہوسکتی ہے

یاد رہے کہ آج وزیراعظم شہباز شریف وفد کے ساتھ مسجد نبوی ﷺ پہنچے تو لوگوں نے چور چور کے نعرے لگادیے۔ذرائع کے مطابق مدینہ منورہ میں شہباز شریف وفد کے ہمراہ پہنچے تو لوگوں نے ان کا استقبال چور چور کے نعروں سے کیا۔

ذرائع کے مطابق شاہ زین بگٹی، مریم اورنگزیب کو دیکھتے ہی لوگوں نے نعرے بلند کیے جبکہ شہباز شریف کی گاڑی کو گارڈز نے گھیرے میں لیے رکھا۔

ذرائع کا بتانا ہے کہ لوگوں کی بڑی تعداد نے حکومتی وفد کا پیچھے کیا اور نعرے لگائے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل شہباز شریف کابینہ کے ارکان کے ہمراہ مدینہ منورہ پہنچے تھے، وفد میں بلاول بھٹو، مفتاح اسماعیل، شاہ زین بگٹی مریم اورنگزیب شامل ہیں، وفد میں خواجہ آصف، چوہدری سالک حسین، خالد مقبول، محسن داوڑ بھی شامل ہیں۔

اس سے قبل گورنر مدینہ اور شہباز شریف کی ملاقات بھی ہوئی جس میں پاک سعودی تعلقات اور دو طرفہ باہمی امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

یاد رہے کہ وزیر اعظم شہباز شریف سعودی قیادت سے ملاقات اورعمرہ کی سعادت حاصل کریں گے۔