لاہور میں دفعہ 144 کی خلاف ورزی، ذمہ دار کون؟ سبزی منڈی میں حفاظتی انتطامات نہ ہونے کے برابر

لاہور میں دفعہ 144 کی خلاف ورزی، ذمہ دار پنجاب حکومت، سبزی منڈی میں حفاظتی انتطامات کا ذمہ دار کون؟
باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق پنجاب حکومت نے خود دفعہ 144 کی دھجیاں بکھیر دیں، لاہور کی سبزی منڈی میں آنے والے افراد کے لئے کوئی حفاظتی انتظامات نہیں

پنجاب کے صوبائی دارالحکومت لاہور کے علاقے بادامی باغ میں فروٹ اینڈ سبزی منڈی میں سینکڑوں افراد صبح آتے ہیں اور اس دوران وہاں رش لگ جاتا ہے، منڈی میں‌ موجود افراد کے مابین فاصلہ بھی نہیں ہوتا، ایک طرف لاک ڈاؤن کا اعلان کیا گیا ہے دفعہ 144 نافذ ہے دوسری جانب پنجاب حکومت خود دفعہ 144 کی خلاف ورزی کرتی نظر آتی ہے

سبزی و فروٹ منڈی میں آنے والے افراد کے لئے کرونا سے بچاؤ کا کوئی انتظام نہیں، سماجی فاصلہ نہ ہونے کی وجہ سے کروناکے پھیلنے کا خطرہ ہے، آنے والے افراد بھی خوف میں مبتلا ہیں تا ہم پھر بھی وہ روزانہ سبزی منڈی میں آتے ہیں اور سامان خریدتے ہیں

اگر یہی صورتحال رہی اور سبزی منڈی میں حفاظتی انتظامات نہ کیے گئے تو کرونا وائرس کے بڑے پیمانے پر پھیلاؤ کا خطرہ ہے،حکومت کو چاہئے کہ اس ضمن میں نوٹس لے اور سبزی منڈی میں کرونا کے حوالہ سے بنائے گئے قوانین پر عملدرآمد کروائے، اگر ایسا نہیں کیا جاتا تو کرونا لاہور بھر میں پھیل سکتا ہے،پہلے بھی لاہور کے ایک درجن کے لگ بھگ علاقے کرونا وائرس کی وجہ سے سیل کیے جا چکے ہیں.

پنجاب حکومت کی جانب سے کرونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لئے ایک آرڈیننس بھی جاری کیا گیا ہے لیکن عملی طور پر حکومت دفعہ 144 کی خلاف ورزیوں کو روکنے میں ناکام ہو چکی ہے، پنجاب میں اب لاک ڈاؤن میں 25 اپریل تک توسیع کر دی گئی ہے، کم رسک والے شعبہ جات کو کام کرنے کی اجازت دے دی گئی ہے تا ہم لاک ڈاؤن کے حوالہ سے قوانین پر عملدرآمد کی ضرورت ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.