لاک ڈاؤن، بھوک سے مزدوروں کا کیا حال ہے، خاتون سامان تقسیم کرنے گئی تو اسکے ساتھ کیا بیتی؟ افسوسناک خبر

0
13

لاک ڈاؤن، بھوک سے مزدوروں کا کیا حال ہے، خاتون سامان تقسیم کرنے گئی تو اسکے ساتھ کیا بیتی؟ افسوسناک خبر

باغی ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق لاک ڈاؤن کے دوران مزدوروں میں سامان تقسیم کرنے جانے والی خاتون پر مزدوروں نے حملہ کر دیا.

ایک خاتون نے ویڈیو کے ذریعہ پیغام دیا ہے کہ آج میں کچھ چیزیں بازار لینے گئی تو سوچا کہ مزدوروں کو بھی کچھ دے دوں گی، چوک پر میں نے تین چار مزدور دیکھے میں نیچے اتری اور ہینڈ بیگ بھی نکالا جیسے ہی میں نیچے اتری تو دو سو لوگ میری گاڑی کے ارد گرد شیشے کو مار رہے ہیں ایک نے کہا شیشہ توڑو، بھوک جس طرح ان کو ستا رہی تھی میں نے ایسا منظر کبھی نہیں دیکھا

خاتون کا کہنا تھا کہ فلموں میں شاید کبھی ایسا دیکھا ہو لیکن آج پہلی بار دیکھا، مزدوروں کے ہاتھ جس طرح چھینا جھپٹی کر رہے تھے ان کے ہاتھ شیشے کے اندر تھے مین نے شیشہ بند کر دیا، مشکل سے ہم وہاں سے نکلے انہوں نے ہمارا پیچھا کیا، اور بائیک پر پیچھے آئے جو ہم نے دینا تھا وہ بھی نہیں دے سکی، جو بھوک دیکھی ہے وہ کبھی نہیں دیکھی

خاتون نے روتے ہوئے کہا کہ اللہ نے ہمیں بہت نعمتوں سے نوازا ہے، ناشکری کی کوئی گنجائش نہیں، ہمیں اللہ کا شکر ادا کرنا چاہئے اور مزدوروں ، غریبوں کی مدد کرنی چاہئے.

واضح رہے کہ کرونا وائرس کی وجہ سے ملک بھر میں لاک ڈاؤن ہے، لاک ڈاؤن کی وجہ سے مارکیٹس، بازار سب بند ہیں، پبلک ٹرانسپورٹ بھی بند ہے،غریب اسوقت دو وقت کی روٹی کو ترس گئے ہیں، حکومتوں نے امدادی پیکج کا اعلان تو کیا ہے لیکن ابھی تک امداد دی نہیں جا سکی،

دہاڑی دار مزدور طبقہ دو وقت کی روٹی کو ترس رہا ہے ،ایسی صورتحال میں کراچی، سکھر سمیت سندھ کے کئی شہریوں میں عوام نے گھروں سے باہر نکل کر احتجاج کیا.اور حکومت سے مدد کی اپیل کی،

واضح رہے کہ ملک بھر میں کرونا وائرس کی وجہ سے 20 ہلاکتیں ہو چکی ہیں جبکہ مریضوں کی تعداد 16 سو سے زائد ہے، آئے روز مریضوں اور ہلاکتوں میں اضافہ ہو رہا ہے.

Leave a reply