گوجرانوالہ :مسافروں کو پبلک ٹرانسپورٹرز کی لوٹ مار سے بچانے کیلئے انتظامیہ متحرک

گوجرانوالہ، باغی ٹی وی (نامہ نگار محمد رمضان نوشاہی )عیدالاضحی کا آخری روز، مسافروں کی بڑے شہروں کو واپسی ، ڈویژنل اور ضلعی انتظامیہ عید کی چھٹیاں گزار کر جانے والے مسافروں کو پبلک ٹرانسپورٹرز کی لوٹ مار سے بچانے کیلئے متحرک ,کمشنر نوید حیدر شیرازی اور ڈپٹی کمشنر محمد طارق قریشی کی پبلک ٹرانسپورٹ میں کرایوں کی چیکنگ اوور چارجنگ پر بس بند کردی،مسافروں سے بھی استفسار،قانون شکن ٹرانسپورٹرز کو سخت کارروائی کا عندیہ،ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹی ٹیمیں فیلڈ میں متحرک ہوں۔وزیراعلٰی پنجاب مریم نواز شریف کی ہدایات بس و ویگن اڈوں پر اوور چارجنگ کی سختی سے روک تھام کیلئے ضلعی انتظامیہ کے دیگر افسران بھی متحرک ۔

تفصیلات کے مطابق کمشنر نوید حیدر شیرازی اور ڈپٹی کمشنر محمد طارق قریشی کا وزیرآباد اور گوجرانوالہ کے مختلف بس و ویگن اڈوں کا دورہ،انہوں نے وزیرآباد، گوجرانوالہ میں جنرل بس اسٹینڈ، سٹار ٹریول کا دورہ کیا ۔ اوور چارجنگ کی شکایات پر جنرل بس اسٹینڈ میں بس کو بند کردیا، جرمانہ بھی عائد کیا ۔ انہوں نے مسافروں کو کرایہ واپس کرواتے ہوئے ٹرانسپورٹرز کو وارننگ جاری کردی، اوور چارجنگ پر زیروٹالرینس ہوگا۔

انہوں نے اس موقع پر ہدایات جاری کرتے ہوئے کہا کہ تمام اسسٹنٹ کمشنرز اور متعلقہ افسران اپنی تحصیلوں میں بس و ویگن اڈوں کو چیک کریں،اوور چارجنگ کی شکایات کی روک تھام کیلئے ٹرانسپورٹرز خود تعاون کریں اور گھروں کو واپسی پر اوور چارجنگ کی شکایات بڑھ جاتی ہیں، افسران ہر گاڑی کو روک کر مسافروں سے کرایہ وصولی بارے پوچھیں۔

کمشنر اور ڈپٹی کمشنر محمد طارق قریشی نے عید الاضحی کے موقع پر پبلک ٹرانسپورٹ کے کرایوں اور بس اڈوں پر فراہم کردہ سہولیات کا بھی جائزہ لیتے ہوئے کہا کہ عیدالاضحی کے موقع پر شہریوں سے زائد وصولی کرنے والے ٹرانسپورٹ مالکان کے سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی، ٹرانسپورٹرز مقررہ کردہ کرایہ نامہ پر عملدرآمد یقینی بنائیں، کرایہ نامہ نمایاں مقامات پر آویزاں کیا جائے، تمام گاڑی مالکان فرنٹ اسکرین پر کرایہ نامہ آویزاں کریں، خلاف ورزی کرنے والے ٹرانسپورٹرز پر بھاری جرمانہ عائد کیا جائے اور گاڑی کو بند کردیا جائے گا،

انہوں نے کہا کہ اڈوں پر بنیادی سہولیات فراہم کی جائیں، مسافروں کو بیٹھنے کے لیے جگہ ، مسجد اور صاف ستھرے واش روم فراہم کئے جائیں۔

Leave a reply