لو بلڈ پریشر کی وجوہات اور علامات

جب انسان کا سسٹولک پریشر نارمل دسے کم ہو جاتا ہے تو بلڈ پریشر گر جاتا ہے اس صورت میں خون دل دماغ اور گردوں کو مناسب مقدار میں سپلائی نہیں ہوتا اسے لو بلڈ پریشر کہتے ہیں لو بلڈ پریشر کی کئی وجوہات ہوتی ہیں شراب نوشی سے بلڈ پریشر کم ہو جاتا ہے کیانکہ شراب اور الکوحل اعصابی نظام کو غیر معمولی طور پر متاثر کرتی ہیں جس سے خون کا دباؤ انتہائی کم ہو جاتا ہے اینٹی انیگزیٹی ادویات کا استعمال نرو سسٹم کو بری طرح متاثر کرتا ہے اس سے بھی بلڈ پریشر کم ہو جاتا ہے بعج گردوں کر مریض پیشاب آور ادویات کا استعمال کرتے ہیں جس سے پانی کی کمی ہو جاتی ہے تو مریض کا بلڈ پریشر کم ہو جاتا ہے اس کے علاوہ جسمانی کمزوری بھی بلڈ پریشر کم ہونے کی وجہ بنتی ہے اس صورت میں نبض کی رفتا سست ہو جاتی ہیں مریض کو سستی اور کمزوری محسوس ہو تی ہے متلی اور قے کی کیفیت ہو تی ہے تھکاوٹ اور گھبراہٹ محسوس ہو تی ہے سر میں ہلکا ہلکا درد ہوتا ہے اور آنکھوں کے سامنے اندھیرا چھا جاتا ہے بلڈ پریشر کا عام اور بہترین حل سادہ پانی کا زیادہ سے زیادہ استعمال ہے ڈی ہائیڈریشن کی صورت میں پانی کا استعمال زیادہ کیا جائے پانی میں نمک ڈال کر پینا بھی مفید ثابت ہو تا ہے وٹامنز اور نمکیات کے ساتھ ساتھ پروٹینز سے بھر پور غذاؤں پر بھی توجہ دیں اگر بلڈ پریشر کی بیماری شدت اختیار کر جائے تو وین کے ذریعے لیکویئڈ دینا موثر ثابت ہو تا ہے سگریٹ نوشی ترک کر دیں کیونکہ تمباکو میں موجود نکوٹین نہ صرف دل اور دوران خون کو متاثر کرتی ہے بلکہ اعصابی نظاک کو بھی بری طرح متاثر کرتی ہے کم بلڈ پریشر کی صورت میں ایک گلاس نیم گرم دودھ میں چھوٹی مکھی کا شہد ملاکر پلائیں فوراً افاقہ ہو گا ایک کپ گرم پانی می اکی عدد لیموں کا رس دو چائے کے چمچ شہد اور ایک چٹکی پسی لونگ ڈال کر گھونٹ گھونٹ پئیں یہ بھی لو بلڈ پریشر میں افقے کے لئے نہایت مفید ہے

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.