بالی وڈاداکارہ لیونیا لودھ کا فلم ساز مہیش بھٹ پر ہراسانی کا الزام

بالی وڈاداکارہ لیونیا لودھ نے معروف فلم ساز مہیش بھٹ پر ہراسانی کا الزام لگاتے ہوئے انہیب بالی وڈ انڈسٹری کا ڈان قرار دیا-

باغی ٹی وی : سوشانت سنگھ راجپوت کی موت کے بعد سے بالی وڈ پر آئے دن نئے نئے انکشافات ہو رہے ہیں اور بالی وڈ کی پریشانیاں دن بہ ان ک ہونے کی بجائے بڑھتی جا رہی ہیں اور اس کی لپیٹ میں بہت سی معروف شخصیات آ چکی ہیں جن میں مہیش بھٹ بھی ہیں-

مہیش بھٹ جو اس سے قبل اداکار سُوشنات سنگھ راجپوت کی موت سے جڑی خبروں کے باعث میڈیا میں ہائی لائٹ ہوئے تھے انہیں اس بار سنگین الزامات کا سامنا ہے۔

ٹائمز آف انڈیا کے مطابق اب فلمساز پر بالی وڈ اداکارہ یونیا لودھ نے جنسی ہراسانی کا الزام لگایا ہے-اداکارہ نے سوشل میڈیا پر ایک 2 منٹ کی ایک ویڈیو شئیر کی جس میں انہوں نے بالی وڈ میں ڈرگ اسمگلنگ اور اداکاروں کے استعمال سے متعلق نیا پنڈورا باکس کھول دیا ہے۔

29 سالہ اداکارہ نے اپنی اور اپنی فیملی کے تحفظ کے لیے بنائی گئی ویڈیو میں کئی بڑے انکشافات کیے جن میں سے ایک یہ ہے کہ وہ مہیش بھٹ کے بھتیجے سُمت سبھروال کی بیوی ہیں اور انہوں نے اس سے طلاق کے لیے درخواست دائر کر رکھی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ سُمت سبھروال سپنا پبی اور امائرہ دستور جیسی کئی اداکاراؤں کو منشیات فراہم کرتا ہے میرے شوہر کی ان تمام حرکتوں سے مہیش بھٹ بخوبی واقف ہیں۔

لیونیا لودھ نے یہ بھی کہا کہ بالی وڈ کا سب سے ’بڑا ڈان‘ مہیش بھٹ ہے جو انڈسٹری کا پورا سسٹم چلاتا ہے اگر آپ اس کے قوانین پر عمل نہیں کرتے تو آپ کی زندگی مشکل بناتا ہے اس نے کام سے نکلوا کر کئی لوگوں کی زندگیاں برباد کردیں اس کے ایک فون پر لوگ اپنی ملازمت کھو دیتے ہیں۔

اداکارہ نے کہا کہ جب سے میں نے مہیش بھٹ کے خلاف مقدمہ درج کروایا ہے تب سے وہ مجھے دھمکیاں دے رہا ہے میرے گھر میں داخل ہونے اور مجھے یہاں سے بے دخل کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔

لیونیا لودھ نے اپنی ویڈیو کے آخر میں کہا کہ اگر میرے یا میری فیملی کے ساتھ کچھ بھی ناخوشگوار واقعہ پیش آئے تو اس کے ذمے دار مہیش بھٹ، مکیش بھٹ، سُمت سبھروال، ساحل سہگل اور کم کم سہگل ہوں گے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ لوگوں کو معلوم ہونا چاہیے کہ یہ تمام لوگ بند دروازوں کے پیچھے کیا کرسکتے ہیں خاص طور پر مہیش بھٹ جو انتہائی طاقتور اور بااثر ہیں۔

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.