fbpx

مدرسہ میں استاد کا تشدد: 4 سالہ طالبعلم کی آنکھ ضائع ہو گئی

لودھراں: صوبہ پنجاب کے ضلع لودھراں میں مدرسے کے طالبعلم کی آنکھ استاد کے تشدد سے ضائع ہو گئی ہے۔ طالبعلم کی عمر صرف چار سال ہے۔

باغی ٹی وی : میڈیا رپورٹ کے مطابق لودھراں کے ایک مدرسے میں چار سالہ طالبعلم کو استاد نے سبق یاد نہ کرنے پر تشدد کا نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں اس کی ایک آنکھ ضائع ہو گئی۔

رپورٹ کے مطابق طالبعلم کی حالت خراب ہوتا دیکھ کر مدرسے کا استاد فرار ہو گیا۔ والدین کی شکایت پر علاقہ پولیس نے مقدمہ درج کرلیا ہے ضلعی پولیس افسر کی ہدایت پر تھانہ کہروڑ میں استاد کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ اس حوالے سے والدین کی مدعیت میں درج کی جانے والی ایف آئی آر میں کہا گیا ہے کہ رند جادہ میں قائم مدرسے میں ان کا چار سالہ بیٹا تعلیم حاصل کرتا ہے جہاں کے استاد نے سبق یاد نہ کرنے پر تشدد کا نشانہ بنایا ہے۔

درج ایف آئی آر میں لکھا گیا ہے دوران تشدد استاد کا ڈنڈا بچے کی آنکھ میں لگا جس کی وجہ سے اس کی آنکھ ضائع ہو گئی ہے۔ پولیس نے مقدمہ درج کرنے کے بعد ملزم کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارنا شروع کردیئے ہیں۔

دوسری جانب ویڈیو سیکنڈل کے مرکزی ملزم مفتی عزیز الرحمان کو عدالت پیش کیا گیا تھا مدرسے کے طالب علم سے بدفعلی کے الزام میں گرفتار مفتی عزیر الرحمان کیخلاف کیس پر سماعت ہوئی کینٹ کچہری کے جوڈیشل مجسٹریٹ رانا راشد نے کیس پر سماعت کی پولیس کیجانب سے مفتی عزیز الرحمان کو جیل سے لا کر عدالت کے روبرو پیش کیا گیا، عدالت نے مقدمہ کے گواہان کو طلب کرتے ہوئے مزید سماعت 15 نومبر تک ملتوی کر دی۔

عدالت مفتی عزیز الرحمان اور اس کے پانچ بیٹوں کے خلاف فرد جرم عائد کر چکی ہے مفتی عزیز الرحمان کے بیٹے الطاف الرحمان ، عتیق الرحمان ٫ عطا الرحمان ٫ وسیع الرحمان اور لطیف الرحمان مقدمہ میں ملوث ہیں ان کا ساتھی ملزم عبد اللہ بھی مقدمہ میں ملوث ہے، مفتی عزیر الرحمان کے بیٹے بھی پیش ہوئے، مفتی عزیز الرحمان کے بیٹوں پر مدعی کو جان سے مارنے کی دھمکیاں دینے کا الزام ہے

مفتی عزیز الرحمان کو پولیس نے میانوالی سے گرفتار کیا تھا اور وہ اب جوڈیشل ریمانڈ پر جیل میں ہیں دوران تفتیش گرفتار مفتی عزیز الرحمان نے پولیس کے سامنے اعتراف جرم کرلیا دورانِ تفتیش مفتی عزیز الرحمان کا کہنا تھا کہ ویڈیو میری ہی ہے جو صابر شاہ نے چھپ کربنائی طالبعلم صابر کو پاس کرنے کا جھانسہ دیکر اپنی ہوس کانشانہ بنایا ویڈیووائرل ہونے کے بعد خوف کا شکار ہوگیا تھا بیٹوں نے صابر شاہ کو دھمکی دی تھی اور اسے اس بات کو آگے کسی کو بتانے سے روکا تھا لیکن ویڈیو وائرل ہو گئی

پاکستان کے مدارس میں زیادتی کے واقعات میں دن بدن اضافہ ہو رہا ہے. ان واقعات سے مدارس کی ساکھ بری طرح سے متاثر ہوگئی ہے. ہر آنے والے دن بچوں کے ساتھ زیادتی کے واقعات میں مسلسل اضافے کی وجہ سے معاشرے کا ہر فرد پریشان ہے-