fbpx

ماہی گیر نے مچھلیاں پکڑنے کے دوران دریائی بلا جیسی مچھلی ہی پکڑ لی۔

ماہی گیر نے مچھلیاں پکڑنے کے دوران دریائی بلا جیسی مچھلی ہی پکڑ لی۔
باغی ٹی وی:فنوم پین کمبوڈیا میں ایک حیران کن واقعہ پیش آیا ہے جس میں ایک ماہی گیر نے مچھلیاں پکڑنے کے دوران ایک ایسے مچھلی پکڑ لی جو کہ بہت ہی بڑی تھی جیسے کہ دریائی بلا ہو ۔ جب اس مچھلی کو سائنس دانوں نے دیکھا تو ان کا کہنا تھا کہ یہ مچھلی دنیا کی سب سے بڑی دریائی پانی کی مچھلی ہے ۔

مزید تفصیلات کے مطابق ماہی گیر جس کا نام مول ٹھول ہے۔اس نے جب مچھلی پکڑنے کیلئے جال پانی میں ڈالا تو اس کے جال میں تقریباً 299 کلو گرام وزنی اور 13 فٹ لمبی اِسٹنگرے مچھلی پھنسی تھی۔
اس سے پہلے یہ ریکارڈ 2005 میں تھائی لینڈ میں پکڑی جانے والی کیٹ فِش کا تھا جس کو ایک ماہی گیر نے پکڑا تھا .۔جس کا وزن 293 کلو گرام معلوم ہوا تھا۔

مزید براں یہ کہ اسٹنگرے جس کو کھیمر زبان میں بورامی یعنی جس کو مکمل چاند کہا جاتا ہے۔اس ہی مچھلی کو ماہی گیر نے اپنے جال میں پھنسایا تھا۔
اس مچھلی پر بہت تحقیق بھی کی گئی ۔اس منصوبے میں سائنس دانوں نے اس بڑی مچھلی کو دریا میں واپس چھوڑنے سے پہلے اس پر ٹیگ لگانے کے ساتھ ساتھ پیمائش اور وزن کرنے میں مدد کی تھی۔اس مچھلی پر ٹیگ لگانے کا مقصد یہ تھا کہ اسٹنگرے کا دریا میں اس کے برتاؤ کے متعلق سمجھنے میں مدد دے گا ۔مزید یہ بھی کہ اس اسٹنگرےمیں جو آلہ لگایا گیا تھا وہ اگلے سال تک مچھلی سے متعلق معلومات فراہم کرنے میں مدد کرے گا۔جس دریا میں یہ مچھلی پکڑی تھی یہ دریا چین، میانمار، لاؤس اور تھائی لینڈ ، کمبوڈیا اور ویتنام سے بھی گزرتا ہے۔